سندھ ہیلتھ کیئرکمیشن کی کارروائیاں،48کلینکس سیل 

سندھ ہیلتھ کیئرکمیشن کی کارروائیاں،48کلینکس سیل 

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کے انسداد اتائیت ڈائریکٹوریٹ نے کنوینر انسداد اتائیت کمیٹی ڈاکٹر خالد شیخ کی ہدایات کی روشنی میں اتائیوں کے خلاف ایف اء ار درج کروا دیں۔ یہ اتاء بند کلینکس کو زبردستی کھول لیتے تھے۔ اس حوالے سے سات ایف اء ار درج کروائی کی گء ہیں جس میں سے چار بدین، دو جیکب اباد اور کراچی میں ایک  درج کروائی گء ہے۔  اینٹی کیکوری کمیٹی کے سربراہ ڈاکثر خالد شیخ  اور بورڈ اف کمشنرز جس میں جواد  امین اور ڈاکٹر عبدل الرزاق شیخ نے ایک میٹنگ میں ایسے عناصر کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ کیا جو  ایس ایچ سی سی  کی رٹ کو چینلج کرتے ہیں۔ ان احکامات پر عملدرآمد کیلئے ڈائریکٹر انسداد اتائیت یاسین ویسر اور ان کی ٹیم نے متعلقہ ایس ایس پیز سے ملاقاتیں کیں اور اتائیوں کے خلاف پاکستان پینل کوڈ کے تحت ایف اء ار درج کروائی گئیں۔ مزید براں انسداد اتائیت ڈائریکٹوریٹ کی ٹیموں نے گزشتہ ایک ہفتے کے دوران 90کلینکس کا معائنہ کیا اور 48اتائیوں کے کلینکس کو سیل کردیا۔ جبکہ بورڈ اف کمشنرز کی سفارشات  اور بند کلینکس کو دوبارہ کھولنے کے حوالے سے درخواستوں کی روشنی میں  20پریکٹیشنرز و مالکان پر عائد دس لاکھ  جرمانہ بھی وصول کیا۔کنوینر انسداد اتائیت کمیٹی ڈاکٹر خالد شیخ نے کہا کہ کمشن کے قانون کے مطابق ہیلتھ کیئر سروسز کی ریگولرائزیشن اور اتائیوں کے خلاف سخت کارروائی کیمشن کا مینڈیٹ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایم بی بی ایس ڈاکٹروں نے تحریری طور پر معافی مانگی ہے اور تسلیم کیا ہے کہ ان کی   غیر موجودگی مین ڈسپنسر اور کمپاونڈر مریضوں کا علاج کرتے ہیں۔انہوں نے امید ظاہر  کی کہ ڈاکٹرز ڈسپنسر اور کمپاونڈر کو مریضوں کا علاج کرنے سے روکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی درخواستیں جرمانے عائد کرنے کے بعد ختم کردی گء ہیں مگر ٹیمیں فالو اپ دورے کرتی رہی گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -