قدیمی شاہی عیدگاہ مسجد کو ملتان میں مرکزی حیثیت حاصل

قدیمی شاہی عیدگاہ مسجد کو ملتان میں مرکزی حیثیت حاصل

  

 ملتان (سٹی رپو رٹر)ملتا ن میں خانیوال روڑ پر چونگی نمبر9کے قریب واقع مغلیہ دور کی نشانی تاریخی شاہی عید گاہ کو مغل گورنر نواب عبد الصمد خا ن نے 1735ئمیں تعمیر کروایا تھا یہ مسجد سینکڑوں سالوں سے آباد ہے جہاں پانچ وقت کی نما ز با جماعت 

(بقیہ نمبر28صفحہ6پر)

ادا کی جاتی ہے اس شاہی عید گاہ میں نماز عیدین میں بھی ہزاروں کی تعدادمیں نمازی شرکت کرتے ہیں جبکہ ماہ رمضان المبارک میں منماز تراویح کا خاص اہتمام بھی کیا جاتا ہے رمضان المبارک کے بابرکت مہینے میں سینکڑوں کی تعداد میں افراد باجماعت نماز تراویح ادا کرتے ہیں مسجد کو شہر میں مرکزیت کی حیثیت حاصل ہے مستطیل عمارت والی اس مسجد کی لمبائی 240فٹ جبکہ چوڑائی 54فٹ ہے مسجد کے کل سات گنبد ہے جبکہ سب سے بڑا گنبد درمیان میں واقع ہے مسجد کو روغنی ٹائلز سے مزین اور نیلی گرافی اور پھول پتیوں کی ملتانی نقاشی سے سجایا گیاہے ملتان میں انگریزوں کے قبضے کے دوران یہ عمارت ڈپٹی کمشنر کی عدالت کے طورپر بھی استعمال ہوتی رہی ہے تاہم 1888ء میں مسجد مسلمانوں کو واپسی کر دی گئی تھی 1940ء سے لیکر 1986ء تک اس مسجد کے خطیب علامہ احمد سعید کاظمی رہے آپ کی وفات کے بعد آ پ کے صاحبزادے صاحبزادہ سید مظہر سعید کاظمی خطابت کے فرائض سر انجام دے رہے ہیں یہ مسجد خوبصورتی کا شاہکار ہے جس میں بیک وقت ہزارو ں کی تعداد میں نماز ی نماز اداکر سکتے ہیں۔

قدیمی شاہی عیدگاہ مسجد

مزید :

ملتان صفحہ آخر -