پاکستان کسان اتحاد مزدوروں  کی جماعت، ہمیشہ محنت کشوں کا  ساتھ دینگے، ملک ذوالفقار حسین

پاکستان کسان اتحاد مزدوروں  کی جماعت، ہمیشہ محنت کشوں کا  ساتھ دینگے، ملک ...

  

 وہاڑی (بیورورپورٹ،نامہ نگار)مرکزی صدر پاکستان کسان اتحاد(بقیہ نمبر48صفحہ6پر)

 ملک ذوالفقار حسین اعوان کسانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا یکم مئی ہمیں ان  مزدوروں کی یاد دلاتا ہے جنہوں نے اپنی جانوں کی قربانیاں دیں تفصیل کے مطابق  ملک ذوالفقار حسین اعوان  نے کہا یکم مئی 1886 وہ تاریخ ساز دن تھا جب مزدوروں نیاجرتوں میں اضافے جیسے بنیادی حقوق کے حصول کے لیے پرامن جدوجہد کاآغازکیا  جب امریکا کے  شہر شکاگو کی فیکٹریوں اور کارخانوں میں کام کرنے والے مزدوروں نے غیرانسانی اوقات کار، حالات کار اور اجرتوں میں اضافے جیسے بنیادی حقوق کے حصول کے لیے پر امن جدوجہد کا آغاز کیا۔یکم مئی کی تحریک کوئی اچانک پیدا ہوجانے والی تحریک نہیں تھی، بلکہ یہ امریکا میں انیسویں صدی کے آغاز سے شروع ہوجانے والی مزدور تحریکوں کا تسلسل تھی۔ 1806 میں امریکا کے مزدوروں نے اوقات کار میں کمی کی تحریک شروع۔ 1827 میں فلاڈیلیفیا میں 15 مزدور یونینوں کے اتحاد ”مکنیکس یونین آف ٹریڈ ایسوسی ایشن“ نے غیرمعینہ مدت کی بجائے دس گھنٹے اوقات کار کے لیے احتجاجی تحریک چلائی۔ 1861 میں امریکی کانوں میں کام کرنے والے محنت کش بھی خود کو منظم کرچکے تھے۔اس زمانے میں مزدوروں کے نام سے ایک مشترکہ تنظیم بنائی جس نے امریکا بھر میں یومیہ آٹھ گھنٹے کام کرنے کا شیڈول نافذ کرنے کا مطالبہ کیا۔ اس تحریک کو دبانے کے لیے صنعت کاروں نے  جبری برطرفیوں اور تشدد کی روش اختیار کی، لیکن اس تحریک کو دبایا نہیں جاسکا تین مئی کو شکاگو میں امریکی پولیس نے ہڑتالی مزدوروں پر شدید لاٹھی چارج کیا اور بعد میں فائرنگ شروع کردی جس سے چار محنت کش شہید اور متعدد زخمی ہوگئے۔ حاکموں کی اس بربریت کے خلاف اگلے روز پورے امریکا میں مزدور سراپا احتجاج تھے۔ شکاگو کے  مرکزی جلسے سے مزدور راہ نماؤں کے خطاب کے دوران پولیس نے مداخلت کی اور اسے زبردستی ختم کرنے کی کوشش کی۔ اسی طرح سے بہت سے اور بھی واقعات دکھائی دیتے ہیں جہاں مزدوروں نے اپنے حقوق کی خاطر سامراجی نظام کے خلاف کھڑے ہونا مناسب سمجھا اور اسی وجہ سے یکم مئی کے اس مخصوص دن کو لیبر ڈے کے نام سے منایا جاتا ہے۔پاکستان کسان اتحادمزدوروں کی نمائندہ جماعت ہے اور مزدوروں کے ساتھ کھڑی ہے اس موقع پر چوہدری انور سجاد،میاں طاہر محمود کمبوہ، چودھری شفیق چودھری نذیراحمد، چوہدری محبوب چوہدری مہران ندیم سجاد آفس سیکرٹری شمشاد  حاجی,اقبال اعوان,ملک شاہد منظور اعوان,چوہدری عبدالغنی کے علاوہ کسانوں کی کثیر تعداد موجود تھی مرکزی صدر پاکستان کسان اتحاد ملک ذوالفقار حسین اعوان نے مزید کہا پاکستان کسان اتحاد مزدوروں اور کسانوں کی نمائندہ جماعت ہے کسانوں اور مزدوروں کی ترجمانی کرتی ہے میں اپنے مزدوروں اور کسانوں کے وسیع تر مفاد کے لیے ہر فورم پر آواز اٹھانے کے لیے تیار ہوں جب تک میرے مزدوروں کسانوں کے مسائل حل نہیں ہوتے چین سے نہیں بیٹھوں گا کسان مزدور ملک کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں مگر مگر بدقسمتی سے جو موجودہ حکومت سے  مزدوروں کسانوں کی امیدیں وابستہ ہیں  بدقسمتی سے حکومت سے خوش آئین  پیغام موصول نہیں ہو رہا بجلی مہنگی کھادیں مہنگی زرعی ادویات مہنگی زرعی ادویات اور بیج مارکیٹ میں دو نمبر مل رہا ہے حکومت خاموش تماشائی بنی ہوئی ہیاس موقع پر مرکزی صدر پاکستان کسان اتحاد ملک ذوالفقار حسین اعوان  نے حکومت کوواضح پیغام دیتے ہوئے کہا لیبر ڈے کے موقع پر کسانوں اور مزدوروں کے لیے کچھ سپیشل پیکج کا اعلان کریں اس سے مزدور کسان خوشحال ہو سکے۔

خطاب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -