گودام پر چھاپہ، 7ہزار بوری گندم برآمد، مالکان سے ڈیل کا انکشاف: بڑا سٹاک غائب 

گودام پر چھاپہ، 7ہزار بوری گندم برآمد، مالکان سے ڈیل کا انکشاف: بڑا سٹاک ...

  

 ملتان(سپیشل رپورٹر) محکمہ خوراک کی ٹیم کی طرف سے پکڑی گئی گندم کی  7ہزار بوری قبضہ میں لئے جانے کے بعد مالکان سے ڈیل کرلی گئی ہے اور سیل ہونے والی جگہ سے بھی گندم کابڑاسٹاک بھی منتقل کردیاگیاہے۔ خیبر پختونخواہ میں سمگلنگ کے لئے ذخیرہ کی گئی گندم پکڑے جانے کے باوجود بھی ذمہ داروں کے خلاف کارروائی نہ ہوسکی اور اعلی انتظامیہ کی جانب سے محکمہ خوراک کی ٹیم کو دوبارہ جانے سے روک (بقیہ نمبر57صفحہ6پر)

دیاگیاہے۔ محکمہ خوراک کے فوڈ انسپکٹرمحبوب خان اور ملک عدنان ریاض نے 3روز قبل انڈسٹریل اسٹیٹ میں چھاپہ مارکر میاں خیل کمپنی کے گودام اور احاطہ میں ذخیرہ کی گئی   7ہزاربوری گندم پکڑی تھی۔گندم کے پی کے اور سندھ بھجوائی جاناتھی۔ذرائع کے مطابق انڈسٹریل اسٹیٹ میں پکڑی گئی گندم کے بعد ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولراحمد جاوید نے کارووائی کرنے کی بجائے سیل ہونے والی کمپنی کے احاطہ سے گندم کا ایک بڑاسٹاک دوسری جگہ منتقل کرادیا ہے اور ذمہ داروں کے خلاف کارروائی بھی نہیں کی گئی۔ بتایاگیاہے کہ کمپنی ایک بااثر شخصیت کی ہے جس کی طرف سے مک مکا کرلیاگیاہے۔ذرائع نے بتایاہے کہ دباؤ کے ساتھ مک مکا بھی کیاگیاہے اور مک مکا کے بعد ڈی ایف سی احمد جاوید نے وقوعہ پر جانے کی زحمت بھی گوارانہیں کی۔گندم ذخیرہ کرنے والے میاں خیل کمپنی کے مالکان کی طرف سے چھاپہ مارنے والے محکمہ خوراک کے اہلکاروں کو بھی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔

فائنل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -