اپنے باپ سمیت 100 سے زائد لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارنے والا شخص، کہانیاں ایسی کہ کوئی بھی گھبرا جائے

اپنے باپ سمیت 100 سے زائد لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارنے والا شخص، کہانیاں ایسی کہ ...
اپنے باپ سمیت 100 سے زائد لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارنے والا شخص، کہانیاں ایسی کہ کوئی بھی گھبرا جائے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) فلموں میں آپ نے جرائم پیشہ لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارنے والے کردار دیکھے ہوں گے۔ تاہم آج ہم آپ کوایسے ایک حقیقی کردار سے ملوانے جا رہے ہیں جس نے اپنی زندگی میں100سے زائد جرائم پیشہ لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق برازیل کے اس 66سالہ شخص کا نام پیڈرو روڈریگوئز فلہو ہے جس پر 71لوگوں کو قتل کرنے کے جرائم ثابت ہوئے تاہم خود پیڈرو کا دعویٰ ہے کہ اس نے 100سے زائد لوگوں کو قتل کیا ہے۔ اس نے لگ بھگ تمام عمر جیل ہی میں گزری ہے۔پیڈرو نے پہلا قتل 13سال کی عمر میں کیا۔ اس پہلا نشانہ بننے والا شخص اس کا کزن تھا۔ اس کے علاوہ اس نے اپنے باپ کو بھی موت کے گھاٹ اتارا اور اس کا دل نکال لیا تھا۔ اس کے ہاتھوں موت کے منہ میں جانے والوں میں برازیل کی ریاست مناس گیریز کی میونسپلٹی الفیناس کا نائب میئر بھی شامل ہے۔ 

قتل کی ابتدائی وارداتیں کرنے کے بعد ساﺅپاﺅلو منتقل ہو گیا اور وہاں منشیات سمگلروں کو لوٹنا اور انہیں قتل کرنا شروع کر دیا۔ جب پیڈرو کی گرل فرینڈ ماریا اولمپیا کو ایک مخالف گینگ کے لیڈر نے قتل کروا دیا تو پیڈرو نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر اس گینگ کے سربراہ کے ایک رشتہ دار کی شادی میں فائرنگ کرکے 7افراد کو قتل اور 16کو زخمی کر دیا تھا۔ پیڈرو کو 24مارچ 1973ءکو پہلی بار گرفتار کیا تھا جب اس کی عمر 18سال تھی۔ اس کے بعد وہ متعدد بار گرفتار اور رہا ہوا اور اس دوران قتل کی وارداتیں کرتا رہا۔ 

پیڈرو نے سب سے بھیانک قتل اپنے باپ کا کیا۔ اسے پیڈرو نے ایک جیل میں خنجر کے ساتھ موت کے گھاٹ اتارا اوراس کا دل نکال کر اس کا ایک ٹکڑا دانتوں میں چبا کر تھوک دیا تھا۔ اسے عدالت نے 126سال قید کی سزا سنائی تھی تاہم برازیل کے قانون کے تحت کسی بھی شخص کو 30سال سے زائد تک جیل میں نہیں رکھا جا سکتا، مگر پیڈرو کو 4سال زیادہ قید میں رکھنے کے بعد 34کی قید کاٹنے پر 2007ءمیں رہا کر دیا گیا۔تاہم 2011ءمیں اسے دنگے کرانے اور لوگوں کو محبوس رکھنے جیسے الزامات کے تحت ایک بار پھر گرفتار کر لیا گیا اور عدالت نے اسے 8سال قید کی سزا سنا دی۔ یہ قید کاٹنے کے بعد وہ ایک بار پھر 2018ءمیں رہا ہو گیا۔ اب برازیل میں پیڈرو کی حیثیت ایک سیلیبریٹی کی سی ہے، اس نے اپنا ایک یوٹیوب چینل بنا رکھا ہے جس پر وہ اپنے جرائم کے بارے میں لوگوں کو بتاتا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -