سب سے بڑے بچے میں کیا خاص بات ہوتی ہے؟ سائنس نے بہت بڑا دعویٰ کردیا

سب سے بڑے بچے میں کیا خاص بات ہوتی ہے؟ سائنس نے بہت بڑا دعویٰ کردیا
سب سے بڑے بچے میں کیا خاص بات ہوتی ہے؟ سائنس نے بہت بڑا دعویٰ کردیا

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) ماہرین عمرانیات و نفسیات اس سوال میں بہت زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں کہ بچوں کی پیدائش کی ترتیب ان کی شخصیت پر کیا اثرات مرتب کرتی ہے۔ اس سے پہلے متعدد تحقیق کار یہ دعویٰ کرچکے ہیں کہ پیدائش کی ترتیب بچوں کے مزاج، خوداعتمادی، تعلیم اور زندگی میں کامیابی جیسے پہلوﺅں پر اثرانداز ہوتی ہے۔ اب ایک نئی تحقیق نے یہ دلچسپ دعویٰ کیا ہے کہ سب سے پہلے پیدا ہونے والے بچے کی شخصیت کا صرف ایک انتہائی اہم پہلو دوسرے بچوں سے مختلف ہوتا ہے، جبکہ شخصیت کے دیگر پہلوﺅں کے فرق کے متعلق کئے جانے والے دعوے بے بنیاد ہیں۔

مزید جانئے: اس آدمی نے دنیا کی سیر کے لئے فرسٹ کلاس کی 60لاکھ روپے کی ٹکٹ صرف 30ہزار روپے میں خرید ڈالی، انتہائی انوکھا طریقہ

جریدے PNAS میں شائع ہونے والی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ سب سے پہلا بچہ ذہانت کے اعتبار سے عموماً دوسرے بچوں سے آگے ہوتا ہے جبکہ شخصیت کے دیگر تمام پہلو پیدائش کی تریب سے متاثر نہیں ہوتے۔ شخصیت میں دیگر فرق بعض اور سماجی و نفسیاتی عوامل کی وجہ سے پیدا ہوتے ہیں۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ پہلے بچے کی بہتر ذہانت کی تصدیق سائنسی تحقیق سے ثابت ہوچکی ہے جبکہ شخصیت کے دیگر پہلوﺅں کا فرق سائنسی تحقیق سے ثابت نہیں ہوا۔ اس تحقیق میں امریکا، برطانیہ اور جرمنی کے 20 ہزار سے زائد بچوں کے ڈیٹا کا مطالعہ کیا گیا۔ سائنسدانوں نے خیال ظاہر کیا ہے کہ اس فرق کی بنیادی وجہ یہ ہوسکتی ہے کہ پہلے بچے کو والدین کے مادی، سماجی، نفسیاتی و جسمانی ذرائع کا زیادہ حصہ ملتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس