پاکستان اسٹیل ‘ملازمین کو03ماہ کی تنخواہیں جاری نہ کی گئیں

پاکستان اسٹیل ‘ملازمین کو03ماہ کی تنخواہیں جاری نہ کی گئیں

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹیل کو چلانے کیلئے فوری سنجیدہ اقدامات نہ کیئے گئے کرپشن و تباہی کے ذمہ داروں کا احتساب نہ ہوا اور ملازمین کو03ماہ کی تنخواہیں جاری نہ کی گئیں تو ملازمین شدید احتجاج پر مجبور ہونگے یہ بات پاسلو کے جنرل سیکریٹری ظفر خان نے پاکستان اسٹیل کے ہزاروں ملازمین کے مجمع سے اپنے خطاب میں کہی . تنخواہیں نہ ملنے اور ادارے کو تالا بندی کی جانب لیجانے پر ملازمین میں شدید رد عمل پایا جاتا ہے اور وہ اپنے مطالبات کی حمایت میں بھر پور انداز میں نعرے بازی کررہے تھے . اس موقع پر مقررین نے مزید کہا کہ ادارے کی تباہی اور کرپشن و بد انتظامی کے ذمہ داروں کیخلاف تو آج تک کوئی کاروائی نہ کی گئی مگر اس کی سزا ملازمین کو دیتے ہوئے انہیں تنخواہ، میڈیکل سہولیات ، گریجوٹی اور پی ایف و دیگر مراعات سے محروم کردیا گیا .۔ جون سے گیس پریشر بند ہے. جس کی وجہ سے عملاًپلانٹ بند ہے کل ہونے والی ای سی سی کے اجلاس میں پاکستان اسٹیل کا ایجنڈہ پر ہی نہیں تھا۔ وفاقی اور صوبائی حکومت بھی اسٹیل مل کے حوالے سے سنجیدگی کے بجائے وقت ضائع کررہے ہیں۔ اگر حکومت نے تنخواہیں ادا نہ کی اور احتساب کے ذریعے لوٹی گئی دولت واپس نہ لی گئی تو ملازمین شدیداحتجاج پر مجبور ہوں گے اورہم حکمرانوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اسٹیک ہولڈر کی حیثیت سے اسٹیل مل ملازمین کے حوالے کرے ۔

اور عدالت عظمیٰ سے درخواست کرتے ہیں کہ صورتحال کا فوری نوٹس لے اور لوٹی گئی دولت واپس دلائے۔

مزید : کامرس