مردان سے آزادی مارچ میں شرکت کیلئے20 ہزار کارکن اسلام آباد روانہ

  مردان سے آزادی مارچ میں شرکت کیلئے20 ہزار کارکن اسلام آباد روانہ

  



مردان(بیورورپورٹ) مردان سے آزادی مارچ میں شرکت کیلئے جمعیت علماء اسلام (ف) اور دیگر اپوزیشن جماعتوں پر مشتمل بیس ہزار سے زائد کارکن اسلام آباد کیلئے روانہ ہوئے،جمعرات کے روزجے یو آئی کے ہزاروں کارکنوں پر مشتمل قافلہ ضلعی امیرشیخ الحدیث مولانا محمد قاسم،مولانا امانت شاہ حقانی،تاج الا مین جبل،کشور خان ایڈوکیٹ،قاری نیاز علی،قاری محسن احسان اورمولانا اسرار الحق کی قیادت میں روانہ ہوگئے۔مسلم لیگ (ن) کا بڑا جلوس مسلم لیگی رہنما ایم پی اے جمشید مہمند،عبد السبحان خان،کرنل (ر) شیر افگن،حاجی خان اکبر آفریدی،سلیم گل دولتزئی،نوید خان،ارشد منان کی قیادت میں مردان سے روانہ ہوا جس میں پچاس سے ذیادہ گاڑیاں شامل تھے۔پاکستان پیپلز پارٹی کا قافلہ ضلعی صدر نوابزادہ اورنگزیب خان،اکرام اللہ شاہد،بختاور خان اور اسد علی کی قیادت میں مردان سے روانہ ہوا جس میں سینکڑوں کارکن شامل تھے عوامی نیشنل پارٹی ضلع مردان کا بڑا جلوس سابق ضلع ناظم حما یت اللہ مایار،ہارون خان،لطیف الرحمان،فاروق اکرم کی قیادت میں روانہ ہوا جس میں سینکڑوں گاڑیاں اور ہزاروں کارکن شامل تھے جے یو پی کے قافلے کی قیادت جے یو پی کے صوبائی صدر حاجی فیاض خان اورقاری عبد الہادی اور دیگر کررہے تھے آزادی مارچ کے شرکاء حکومت کیخلاف نعرے بازی کرتے ہوئے مردان کے پانچ تحصیلوں سے روانہ ہوئے جس کے ہاتھوں میں پارٹی اور پاکستانی پرچم لہرارہے تھے روانگی سے قبل ازیں جمعیت علماء اسلام نے انتظامیہ کے خلاف دھرنادیا اور الزام لگایا کہ انتظامیہ نے ڈرائیورز کواسلام آباد میں شرکت سے منع کیا ہے اور انہیں مارچ میں شرکت پر انکے روٹ پرمٹ منسوخ کرنے کی دھمکی دی ہے۔انہوں نے انتظامیہ کے رویے کے خلاف مالاکنڈ چوک میں احتجاجی دھرنا بھی دیا۔انہوں نے کہاکہ حکومت مارچ کو ناکام بنانے کے لئے ایڑی چوڑی کا زور لگا رہا ہے لیکن مارچ ہر حال میں کامیاب ہو گا۔جمعیت علماء اسلام کے کارکنوں نے حکومتی رویے کے خلاف محبت آباد میں بھی دھرنا دیا اور مردان نوشہرہ روڈ کو ہر قسم ٹریفک کے لئے بند کر دیا

مزید : پشاورصفحہ آخر