اقتدار میں نہ ہونے پر مولانا احتجاج کررہے ہیں‘ محسن لغاری

  اقتدار میں نہ ہونے پر مولانا احتجاج کررہے ہیں‘ محسن لغاری

  



جام پور(نامہ نگار) بی ایم پی میں چارسو ساٹھ ملازمین کی بھرتی کی منظوری کے علاوہ چھ کروڑ روپے کی لاگت سے درہ کاہا پر سکیم کی منظوری ہو چکی جس پر جلد کام کااغاز ہو گا۔ سابق دور میں لوٹ مار کرنے والے جلد اپنے قاہد کی طرح انجام کو پہنچنے والے ہیں۔ ماڑی کی خوبصورتی اور کوہ سلیمان کے پہاڑ وں پر لوگوں کے لیے سولر۔ سکول۔ اور تعلیم کے منصوبے مکمل کیے جائیں گے۔ یہ بات ممبر قومی اسمبلی سردار محمد جعفرخان لغاری نے بستی قبول چوک پر محمد اکرم حجانہ کی طرف سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے(بقیہ نمبر36صفحہ12پر)

کہی۔ اس موقع پر سابق ضلع وائس چیرمین مرزا شہزاد ہمایوں۔ میاں خلیل احمد خان۔ حسین تبسم۔ قاسم خان لنگرانہ۔ حسین فریدی کھچیلہ۔ صالع محمد لنڈ۔ اختیار خان لنڈ۔ ایس ڈی او پلک ہیلتھ ودیگر افسران بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ کی تمام محرومیاں ختم کریں گے۔ صوبائی وزیر ابپاشی سردار محسن خان لغاری نے کہا کہ مولنا پہلی مرتبہ اقتدار سے بائر ہیں۔ سابق ادوار میں ذمینیں الاٹ کرانے کے علاوہ حکومتوں سے مفادات حاصل کرتے رہے۔اقتدار میں جگہ نہ ملنے پر مچھلی کی طرح تڑپ رہے ہیں۔ عوامی خدمت کا کوئی منشور ان کے پاس نہ ہے۔ پہلی مرتبہ وزیراعظم عمران خان کا کشمیر پالیسی پر اقدام بین الاقوامی سطح پر زیر بحت ہے۔ امریکہ۔ برطانیہ اور صدر مہاتیر کشمیریوں کے حق میں اواز بلند کیے ہوئے ہیں۔ سابق رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر میناجعفرخان لغاری ودیگر نے بھی خطاب کیا۔قبل ازیں میزبان محمد اکرم حجانہ نے استبقالیہ پیش کرتے ہوئے جام پور سے ہڑند روڈ ز کی تعمیر۔ ہیلتھ۔ تعلیم۔ صاف پانی کی فراہمی کے لیے فلٹریشن پلانٹ۔ اور دیگر مسائل کا مطالبہ کیا جس کو ارکان اسمبلی کی طرف مکمل کرنے کا وعدہ کیا۔

محسن لغاری

مزید : ملتان صفحہ آخر