کشمیر کی آ زا دی کا حل مذا کرا ت نہیں صرف مو دی سے جنگ، خادم رضوی

کشمیر کی آ زا دی کا حل مذا کرا ت نہیں صرف مو دی سے جنگ، خادم رضوی

  



لا ہور (شہزاد ملک) تحریک لبیک پا کستان کے سر برا ہ علا مہ خا دم حسین رضوی نے کہا ہے کہ سیا ست کو مذہب سے الگ کر نے کی با تیں کر نے وا لے نظریہ پا کستان کی نفی کر رہے ہیں، مذہب در میا ن میں لا یا گیا تو ہی پا کستان معرض وجود میں آ یا،اقبال کے نظریے کو عام کیا جا ئے مسلم امہ کو آ ج بھی (بقیہ نمبر11صفحہ12پر)

محمد بن قاسم اور صلا ح الدین ایو بی جیسے لیڈرو ں کی ضرورت ہے، نعرے لگا نے وا لے اور تقا ریر کر نے وا لو ں کو تا ریخ کبھی معا ف نہیں کرے گی،انہوں نے کہا کہ کشمیر کی آ زا دی کا حل مذا کرا ت نہیں صرف مو دی سے جنگ ہے، حکمرا ن عوا م پر ترس کھا ئیں، تا جر، وکلا ء ڈا کٹرزتمام طبقات سڑکو ں پر ہیں، ملک کیا خاک ترقی کرے گا، نظا م مصطفیٰ ہی واحد حل ہے جس پر چل کر مسلما نو ں کو دو با رہ عرو ج ملے گا ان خیا لا ت کا اظہا ر انہو ں نے دو نومبر کو مینا ر پا کستان میں ہو نے والی لبیک کا نفرنس کی تیا ریو ں کے حوا لے سے ”پاکستان“ سے گفتگو کر تے ہو ے کیا۔سر برا ہ تحریک لبیک پا کستان نے کہا کہ یہ بین الاقوامی سطح پر کا نفرنس منعقد کی جا رہی ہے، جس میں ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے وا لے افرا د شریک ہو نگے، کا نفر نس کا مقصد نو جوا نو ں میں عشق مصطفیؐ کی شمع کو روشن کرنا، مسلم امہ کو رہبر دینے کی کو شش کر نا، اور اغیا ر کو پیغا م دینا ہے، طا غو تی طا قتیں پے در پے اسلام پر حملے کر رہی ہیں،ان طا قتو ں کی آ نکھو ں میں آ نکھیں ڈا لنے کا وقت آ چکا ہے، ہما رے حکمرا ن ابھی تک خوا ب و خر گوش کے مزے لو ٹ رہے ہیں۔

خا دم حسین

مزید : ملتان صفحہ آخر