پانی بحران، جماعت اسلامی کا احتجاجی تحریک اور عدالت جانے کا اعلان

    پانی بحران، جماعت اسلامی کا احتجاجی تحریک اور عدالت جانے کا اعلان

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی ضلع غربی نے پانی کے بدترین بحران پرواٹر بورڈ کیخلاف عدالتی چارہ جوئی اور احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا‘ واٹر بورڈ کے دفتر اور وزیراعلیٰ ہاؤس پر دھرنے کا انتباہ،پہلے مرحلے میں ہارون آباد میں وٹر بورڈ کے ڈسٹر کٹ دفتر پر دھرنا دیا جائے گا‘غیر قانی ہائیڈرنٹ ختم‘ بند واٹر پمپ فوری بحال کرنے اور پورے ضلع میں مساوی فراہمی آب یقینی بنایا جائے‘ لائنوں کا رساؤ ہنگامی بنیاد پر روکا جائے۔ ا ن خیالات کا اظہار امیر جماعت اسلامی ضلع غربی محمد اسحق خان نے کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر صدر پبلک ایڈ کمیٹی ضلع غربی فضل احد، جنرل سیکرٹری پبلک ایڈ کمیٹی محمد امین اللہ، جماعت اسلامی کے سابق رکن قومی محمد لئیق خان، سابق رکن صوبائی اسمبلی حمید اللہ خان ایڈووکیٹ، ضلع غربی ڈسٹرکٹ کونسل میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر عبدالجلیل شمسی‘ صدر جے آئی یوتھ ضلع غربی انعام الرحمن، عثمان اعوان ودیگر بھی موجود تھے۔ محمداسحق خان نے مزید کہا کہ کراچی کاضلع غربی تقریباً4ملین آبادی اور وسیع رقبے پر پھیلا ہوا ہے‘ غریب آبادی کے اس ضلعے کے کئی علاقے پانی کی لائنوں سے محروم ہیں تاہم 70تا80فیصد علاقے پانی کی لائنوں کی تنصیب رکھتے ہیں۔ جس میں بلدیہ، سائٹ اور اورنگی ٹاؤن شامل ہیں، اتنے بڑی آبادی والے ضلع کے عوام کافی عرصے سے پانی کیلیے پریشان ہیں‘ اور نجی ہائیڈرنٹ اور ٹینکرمافیا کے رحم وکرم پرہیں، حب ڈیم اور کلری جھیل بھرنے کے باوجود یہاں کے باسی پانی کو ترس رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ضلع غربی کو 110 MGD پانی کی ضرورت ہے جس کا ایک چوتھائی بھی فراہم نہیں کیا جارہا، حب ڈیم ضلع غربی کو پانی فراہم کرنے کا سب سے اہم ذریعہ ہے اور اس میں دو سال کا پانی موجود ہے۔انہوں نے کہا کہ واٹر بورڈ پورے ضلع میں پانی کی مساوی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے مقامی سیاسی قیادت سے مل کر از سرنو منصوبہ بندی کرے، ضلع میں لائنوں سے فراہم کیا جانے والا 35فیصد پانی رساؤ کے باعث ضایع ہوجاتاہے، اس رساؤ کو ختم کرنے کے لیے ہنگامی اقدامات کیے جائیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر