ایغو ر معاملہ، اقوام متحدہ میں پاکستان سمیت 54ممالک چین کیساتھ، 23کی مخالفت

  ایغو ر معاملہ، اقوام متحدہ میں پاکستان سمیت 54ممالک چین کیساتھ، 23کی مخالفت

  



نیو یارک(آئی این پی)اقوام امتحدہ میں پاکستان اور مصر سمیت 54ممالک نے چین کے صوبے سنکیانگ میں ایغور مسلمانوں کیخلاف  کیمپس کو بیجنگ کی انسانی حقوق کے شعبہ میں گرانقدر کامیابی قرار دیدیا۔واضح رہے اقوام متحدہ میں ایغور مسلمان اور دیگر مذہب سے تعلق رکھنے والوں کی انسانی حقوق سے متعلق تشویشناک خبروں کے بعد معاملہ زیر بحث آیا۔بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق چین میں کیمپس سے متعلق اقوام متحدہ میں برطانیہ نے بیجنگ میں انسانی حقوق کی پامالی کا معاملہ اٹھایا تو تقریبا تمام23مغربی ممالک نے لندن کی حمایت کی،جس کے بعد چین کے اتحادیوں بشمول پاکستان، روس اور مصر نے برطانوی موقف کی مخالفت کی اور کہا چین نے انسانی حقوق کے شعبہ میں غیرمعمولی کامیابی حاصل کی ہیں۔واضح رہے کانگو اور سربیا سمیت بولیویا نے بھی چین کی حمایت کی۔خیال رہے سنکیانگ کی آبادی ایک کروڑ کے قریب ہے، جس میں سے زیادہ تر مسلمان اقلیت ایغور سے تعلق رکھتے ہیں۔علاوہ ازیں 23ممالک نے چین کے صوبہ سنکیانگ میں ایغورمسلمانوں کیساتھ غیرانسانی سلوک پر تشویش کا اظہار کیا،تاہم اقوام متحدہ میں تمام 54ممالک نے بیلا روس کی جا نب سے پیش کیے گئے متن کی حمایت کی۔یاد رہے برطانیہ نے اقوام متحدہ میں چین کے اندر بڑے پیمانے پر حراستی کیمپ سے متعلق خدشا ت کا اظہار کیا تھا۔برطانیہ نے کہا تھا حراستی کیمپ سے متعلق معتبر اطلاعات ہیں جس میں ثقافتی و مذہبی رسومات کو محدود کرنے کی کوششیں کی جاتی ہیں، ایغور مسلمانوں کی غیر متناسب طورپر نگرانی کی جاتی ہے اور انسانی اور دیگر بنیادی حقوق کی خلاف وزرزیاں جاری ہیں۔واضح ر ہے انسانی حقوق کی تنظیموں کے مطابق چین کے صوبے سنکیانگ میں 10لاکھ سے زائد ایغور مسلمانوں کو حراست کیمپ میں موجود ہیں۔

ایغور معاملہ

مزید : صفحہ آخر