پرنسپل جنرل ہسپتال نے ڈاکٹروں پر تشدد کے واقعہ کانوٹس لے لیا

پرنسپل جنرل ہسپتال نے ڈاکٹروں پر تشدد کے واقعہ کانوٹس لے لیا

  



لاہور(جنرل رپورٹر) جنرل ہسپتال شعبہ ایمرجنسی میں بدھ کے روز بے ہوشی کی حالت میں والٹن سے 65سالہ مریضہ کو برین ہیمرج (دماغ میں خون کے لوتھڑے)کے ساتھ انتہائی تشویشناک حالت میں لایا گیا تھا جہاں ڈاکٹروں اور نرسنگ سٹاف نے اس کی جان بچانے کیلئے سر توڑ کوششیں کیں اور سی ٹی سکین سمیت اس کے تمام ضروری ٹیسٹ کروانے کے علاوہ 11گھنٹے تک زیر علاج رکھا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہو سکیں۔ مریضہ کی وفات پر لواحقین نے مشتعل ہو کر ایل جی ایچ کے ڈاکٹروں و عملے پر حملہ کر دیا جس سے 5ڈاکٹر زخمی ہوئے۔مریضہ کے عزیز و اقارب نے لیڈی ڈاکٹرز،نرسنگ سٹاف اور پیرا میڈیکل سٹاف سے بھی بد تمیزی کی۔ گزشتہ شب اس نا خوشگوار واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پرنسپل پی جی ایم آئی پروفیسر سردار محمد الفرید ظفر،میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر محمود صلاح الدین اور ڈائریکٹر ایمرجنسی ڈاکٹر رانا محمد شفیق موقع پر پہنچ گئے۔ پرنسپل نے اس واقعہ میں مسیحاؤں پر ہونے والے تشدد کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچانے اور اس کیس کی مکمل پیروی کرنے کی یقین دہانی کرائی۔

ڈاکٹرز تشدد

مزید : میٹروپولیٹن 1