ملکی ترقی کی راہ میں رکاوٹ بننے والوں کا مقابلہ کرینگے، وزیراعلٰی خیبر پختونخوا

ملکی ترقی کی راہ میں رکاوٹ بننے والوں کا مقابلہ کرینگے، وزیراعلٰی خیبر ...

  



پشاور(آئی این پی)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ جو کوئی بھی ملک و قوم کی ترقی کی راہ میں رکاوٹ بنے گا اس کا مقابلہ کرینگے، دیرپاء ترقی اور خوشحالی کا راستہ امن سے نکلتا ہے، ہم اپنی آزادی اور امن کو ہر صورت میں قائم رکھیں گے، وزیراعظم عمران خان نے جس طرح کشمیر کا مسئلہ بین الاقوامی سطح پر اٹھایا اس کی پاکستان کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی، کشمیری مسلمانوں کے حق خود ارادیت پر سمجھوتہ کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے قبائلی ضلع شمالی وزیرستان کے دورہ کے دوران کھلی کچہری سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اراکین صوبائی اسمبلی میرکالام،اقبال وزیر،ملک شاہ محمدوزیر،قبائلی عمائدین اوردیگربھی اس موقع پرموجود تھے۔ وزیر اعلی نے عوام کے مسائل سنے اور موقع پر ہی ان کے حل کیلئے احکامت جاری کیے۔انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع کی ترقی کیلئے 83 ارب روپے کا خطیر بجٹ رکھا گیا ہے جو نئے اضلاع کیلئے صوبائی حکومت کی مخلصانہ سوچ کا عکاس ہے، 2 ارب 92 کروڑ روپے میران شاہ مارکیٹ کی زمین کے استعمال کی مد میں جاری کئے جاچکے ہیں، پیسکو کوبجلی کی بحالی کیلئے 6.9 ارب روپے فراہم کئے گئے ہیں، 197.978 ملین روپے کی لاگت سے شمالی وزیرستان کے گریوم ایریا کو بجلی کی ترسیل کا منصوبہ شروع ہے جس کے تحت گیارہ کلو وولٹ فیڈر کی تنصیب مکمل کر کے گزشتہ روزافتتاح کیا گیا ہے جس سے 50 دیہات مستفید ہونگے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ انہیں یہ جان کر بہت خوشی ہوئی کہ قبائلی عوام بھی ترقیاتی منصوبوں کیلئے اچھی سوچ رکھتے ہیں انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت قبائلی عوام کو ترقی کے دھارے میں لانے کیلئے خطیر وسائل خرچ کر رہی ہے اور یقین دلایا کہ وزیراعظم عمران خان کی طرف سے اعلیٰ تعلیمی اداروں کے قیام کے حوالے سے تمام اعلانات کو عملی جامہ پہنایا جائے گا، ہم نے اپنے بچوں کے ہاتھوں سے بندوقیں لے کر قلم دینا ہے۔ وزیراعلیٰ نے اس موقع پر اعلان کیاکہ غلام خان اور انگور اڈہ بارڈر کو بھی طورخم کی طرز پر تعمیر کیا جائے گا۔ جنوبی اضلاع کیلئے پشاور سے ڈی آئی خان ایکسپریس وے کی تعمیر سے ان علاقوں کی تقدیر بدل جائے گی۔ قبائلی اضلاع اور افغا ن راہداری کو بھی جنوبی ایکسپریس وے سے منسلک کیا جائے گا۔

محمود خان

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر