’ہمارا خون چوس لو‘ وہ خاتون جس کی لوگ منتیں کرتے ہیں

’ہمارا خون چوس لو‘ وہ خاتون جس کی لوگ منتیں کرتے ہیں
’ہمارا خون چوس لو‘ وہ خاتون جس کی لوگ منتیں کرتے ہیں

  



ہیلسنکی(مانیٹرنگ ڈیسک) انسانوں کا خون چوسنے والی ڈائنوں کے بارے میں آپ نے قصے کہانیوں میں سنا ہو گا لیکن ایسی ایک جیتی جاگتی ڈائن یورپی ملک فن لینڈ کے شہر کوٹکا میں رہتی ہے اور لوگ اس کی منتیں کرتے ہیں کہ وہ ان کا خون چوسے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس 24سالہ لڑکی کا نام جولیا کمپولینن ہے جو کئی سالوں سے ’ویمپائر‘ کی زندگی گزاررہی ہے اور انسانوں کا خون چوستی ہے۔ جولیاکا کہنا ہے کہ وہ دور سے ہی خون کی بو سونگھ لیتی ہے اور ہر طرح کے خون کا ذائقہ چکھنا اسے بہت پسند ہے۔

جولیا نے خون چوسنے کے لیے اصلی ڈائنوں کی دو نوکیلے دانت بھی لگوا رکھے ہیں۔ وہ اپنے انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر اکثر اپنی تصاویر پوسٹ کرتی رہتی ہے جہاں لوگ اس سے درخواست کرتے پائے جاتے ہیں کہ وہ ان کا خون چوسے۔ جولیا کا کہنا تھا کہ ”2010ءمیں مجھے احساس ہوا کہ میری عادات فلموں میں دکھائی جانے والی ویمپائرز سے بالکل ملتی جلتی ہیں اور تب سے میں ویمپائر کی سی زندگی گزار رہی ہوں۔ لوگ مجھ سے اس لیے خون چوسنے کی درخواست کرتے ہیں کہ وہ میرے نوکیلے دانتوں میں جنسی رغبت محسوس کرتے ہیں۔ “

مزید : ڈیلی بائیٹس