پنجاب میں سرکاری ملازمین کو بنیادی حقوق سے محروم رکھنا ناانصافی ہے: ایپکا

پنجاب میں سرکاری ملازمین کو بنیادی حقوق سے محروم رکھنا ناانصافی ہے: ایپکا

  

            لاہور(انور کھرل)وفاق میں سرکاری ملازمین کو مراعات کی نوازش جبکہ پنجاب میں سرکاری ملازمین کو بنیادی حقوق سے محروم رکھنا سراسر ناانصافی ہے۔ وفاقی ملازمین کی طرح پنجاب کے سرکاری ملازمین کو بھی 25فیصدڈسپیرنسی الاؤنس، ہاؤس رینٹ الاؤنس، یوٹیلیٹی الاؤنس، گروپ انشورنس سمیت دیگر بنیادی حق یکساں فراہم کئے جائیں۔ مطالبات منظور نہ ہوئے تو احتجاجی تحریک چلائی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار ایپکا کالج ونگ کے عہدیداران صدر ملک کاشف، جنرل سیکرٹری عبدالواسع بھٹی اور سینئر نائب صدر راشد علی بھٹی نے روزنامہ ”پاکستان“ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔ صدر ایپکا کالج ونگ ملک کاشف نے کہا کہ حکومت کی جانب سے صوبائی ملازمین کو ڈسپیرنسی الاؤنس سمیت دیگر الاؤنسز وفاقی ملازمین کو دئیے گئے الاؤنسز کے مطابق نہ دیکر صوبائی ملازمین کے حق پر ڈاکہ ڈالا گیا ہے۔حکومتی نمائندوں اور ترجمانوں کی جانب سے بارہا وعدوں اور یقین دہانیوں کے باوجود مطالبات حل نہیں کئے جا رہے۔ جس پر دلبرداشتہ ہو کر اب اپنے مطالبات اور حقوق کے لئے سڑکوں پر نکلنا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ اسی ماہ میں ایپکا کی اعلیٰ قیادت کا اہم اجلاس منعقد ہو رہا ہے جس میں تبدیلی سرکار سے مطالبات کی منظوری اور ان پر عملدرآمد کے لئے احتجاجی تحریک چلانے کے لئے لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔ جنرل سیکرٹری ایپکا کالج ونگ عبدالواسع بھٹی اور سینئر نائب صدر اشد علی بھٹی نے کہا کہ حکومت جان بوجھ کر سرکاری ملازمین کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک روا رکھے ہوئے ہے۔ صوبائی ملازمین کو موجودہ تنخواہ میں انتہائی کم 5 فیصد ڈسپیرنسی الاؤنس دیکر جان چھڑوانے کی کوشش کی گئی ہے۔مگر ایپکا حکومت کی ان ناانصافیوں پر خاموش نہیں بیٹھے گی۔ ہمارے مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو پنجاب سمیت ملک بھر کے سرکاری ملازمین سڑکوں پر نکلیں گے اورمطالبات تسلیم کروائے بغیر احتجاج کا سلسلہ ختم نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اپنی انتقامی جنگ سے نکل کر سرکاری ملازمین کی فلاح و بہبود کے لئے اقدامات اٹھائے۔

، ورنہ ملازمین اپنے حقوق کے لئے حصول کے لئے نہ رکنے والی تحریک چلانے پر مجبور ہوں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -