”مفاہمت نہ سکھا جبر ناروا سے مجھے“ فواد چوہدری نے اپنا نکتہ نظر پیش کرنے کیلئے شعر پڑھ دیا

”مفاہمت نہ سکھا جبر ناروا سے مجھے“ فواد چوہدری نے اپنا نکتہ نظر پیش کرنے ...

  

   اسلام آباد(آئی این پی)  وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے موجودہ صورت حال پر شاعری کے ذریعے اپنا نکتہ نظر پیش کیا ہے۔ فواد چوہدری نے اردو کے معروف شاعر عدیم ہاشمی کے چند اشعار ٹوئٹ کئے ہیں جس میں انہوں نے ظلم کے سامنے سر جھکانے کے بجائے سینہ سپر کرنے کی بات کی ہے۔ انہوں نے لکھا مفاہمت نہ سکھا جبر ناروا سے مجھے،میں سر بکف ہوں لڑا دے کسی بلا سے مجھے،زباں نے جسم کا کچھ زہر تو اگل ڈالا،بہت سکون ملا تلخی نوا سے مجھے،میں خاک سے ہوں مجھے خاک جذب کر لے گی،اگرچہ سانس ملے عمر بھر ہوا سے مجھے ۔ اپنی ایک اور ٹوئٹ میں فواد چوہدری نے نجی ٹی وی ٹاک شو کا کلپ شیئر کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں جو بھی تحریکیں چلیں ان کی ایک نظریاتی اساس رہی ہے، اسی نظریے کے تحت تحریک چلائی جاتی ہے لیکن جب آپ ایک متشدد سیاسی نظریہ لے کر جس کا مقصد یہ ہے کہ ریاست کو اپنے سامنے جھکایا جائے اور پھر دو تحریکوں کو آپس میں ملا دیں تو یہ پاکستان کے لئے اچھی خدمت نہیں ہوگی۔

فواد چوہدری

مزید :

صفحہ اول -