حکمرانوں نے پاکستان کو امریکی گھوڑوں کا اصطبل بنارکھا ہے ، سراج الحق

حکمرانوں نے پاکستان کو امریکی گھوڑوں کا اصطبل بنارکھا ہے ، سراج الحق

پشاور(آن لا ئن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ حکمرانوں نے پاکستان کو امریکی گھوڑوں کا اصطبل بنا رکھا ،ہم پاکستان کو اسلامی اور ویلفئرسٹیٹ بنائنگے جہاں پر اشیائے خوردونوش پر سبسڈی دی جائیگی،ہمارے حکمرانوں نے گذشتہ ستر سال میں غریب کو مہنگائی اور بد امنی کے تحفوں کے سوا کچھ نہیں دیا ،حکمرانوں نے ستر سال پاکستان کو لوٹ کرلوٹی ہوئی رقوم بیرونی ممالک کے بنکوں میں جمع کی ہمیں اللہ نے موقع دیا تو قومی خزانے کی لوٹی ہوئی رقم بیرونی نمالک سے لاکر لوٹنے والوں کو جیلوں میں بھیجیں گے،آنے والے انتخابات غلامان امریکہ اور غلامان محمد کے درمیان معرکہ ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے درگئی ملاکنڈ میں ایک بڑے شمولیتی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر انہوں نے اپنے سابقہ وزراء اور اراکین اسمبلی کو جلسہ عام میں احتساب کیلئے بھی پیش کیا جبکہ اس موقع پر امیر صوبہ مشتاق احمد خان، جنرل سیکرٹری عبدالواسع، ضلع امیر مولانا جمال الدین، این اے 35امیدوار شہاب حسین، سابق ایم این اے بختیار معانی، سابق وزیر شاہ راز خان،پی کے 99امیدوار امجد علی شاہ،تحصیل درگئی امیر مولانا محمد طیب، ضلع مردان سابق امیر سلطان محمد،فضل ربانی ایوکیٹ، الخدمت فاؤنڈیشن صدر محمد افضل خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ اس موقع پر سینکڑوں افراد نے دیگر پارٹیوں ست مستعفی ہوکر جماعت اسلامی میں شمولیت کااعلان کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان سے لوٹی ہوئی پائی پائی واپس لائینگے عوام اب حلیئے اور جھنڈے بدل کر قومی خزانے کو لوٹنے والوں کو اچھی طرح پہچان چکے ہیں اب ان چند خاندانوں کے حکمرانی کے دن گنے جاچکے ہیں اب ملک میں غلامان محمد کا راج آنے والا ہے انہوں نے کہا کہ امریکہ نے ہمارے ملک کو چند ایسے گھوڑوں کا اصطبل بنایا ہے جہا ں پر ایک گھوڑے کی بدنامی پر دوسرے گھوڑے کو سامنے لاتا ہے انہوں نے کہا کہ یہ اصطبل بنانے میں ہمارے حکمران ہی ذرئعہ رہے انہوں نے کہا کہ اب جماعت اسلامی کی تحریک احتساب منطقی انجام کو پہنچنے کو ہے اب وہ لوگ جنہوں نے مختلف ناموں اور جھنڈوں اور بھیس بدل کر قومی خزانے کو ماں کا دودھ سمجھ کر لوٹا ہے انکیلئے ایک ہی جگہ باقی رہ گئی جو جیل ہے انہوں نے کہا کہ گذشتہ سرع سال میں پاکستان میں حکمرانوں نے عوام کیلئے کچھ نہیں کیا اگر کیا تو اپنی ذات کی لئے کیا اپنی تجوریاں بھری عام آدمی بنیادی سہولت سے بھی محروم ہے ،عام آدمی عدالت اور ہسپتال نہیں جاسکتا عام آدمی انصاف کیلئے در بدر کی ٹھوکریں کھارہا ہے اور حکمران ایک آدمی کی تحفظ کیلئے راتوں رات آئینی ترمیم کے ذرئعے عدالتی فیصلے کو بھی پاؤں تلے روندڈالتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ اگرجماعت اسلامی کی ا حکومت آئی تو پیش اماموں کو حکومتی خزانے سے تنخواہیں دیں گے۔ چیف جسٹس آف پاکستان کے ہاتھ میں قرآن ہوگا اور اسی پر فیصلے ہوں گے،سود کا مکمل خاتمہ، تمام غیر قانونی اورانگریزوں سے وفاداری میں لئے گئی زمینیں بحق سرکار ضبط کئے جائیں گے۔

سراج الحق

مزید : علاقائی