یوم عاشورہ آج مذہبی عقیدت و احترام سے منایا جائیگا،لاہور سمیت کئی شہروں میں موبائل فون بند،بیسیوں مشتبہ افراد گرفتار

یوم عاشورہ آج مذہبی عقیدت و احترام سے منایا جائیگا،لاہور سمیت کئی شہروں میں ...

لاہور 228اسلام آباد،228فیصل آباد228 پشاور228 کوئٹہ228کراچی( کرائم رپورٹر228خبر نگار228 ایجو کیشن رپورٹر 228 نیوز ایجنسیاں) یوم عاشور آج نہایت عقیدت و احترام اور مذہبی رواداری کے ساتھ منایا جائے گا، ملک بھر میں مجالس عزاء منعقد ہوں گی . علم،تعزیے اور ذوالجناح کے ماتمی جلوس نکالے جائیں گے شام کو مجالس شام غریباں برپا ہوں گی، محرم الحرام کے جلوسوں میں سیکورٹی خدشات کے باعث ملک بھر کے مختلف شہروں میں موبائل فون سروس بند اور موٹر سائیکل پر ڈبل سواری پر پابندی عائد کردی گئی ہے . ملک بھر میں نویں اور دسویں محرم الحرام کے جلوسوں کے روٹس اور سکیورٹی اقدامات بھی کردیئے گئے ،جلوس کے راستوں پرعمارتوں پرماہرنشانہ بازتعینات کئے گئے ہیں، جلوسوں کی ہیلی کاپٹرز سے فضائی نگرانی بھی کی جا رہی ہے۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سمیت ؂کراچی،لاہور،پشاور،کوئٹہ،فیصل آباد،ملتان،سرگودھا،سکھر،حیدرآباد اور حساس قرار د یئے گئے شہروں میں موبائل فون بند سروس اور انٹرنیٹ بندہے۔موبائل فون سروس کی بندش سے شہریوں کامواصلاتی رابطہ منقطع ہے جس سے انہیں رابطوں میں شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔دوسری جانب جلوسوں کی سیکورٹی کو فول پروف بنانے کے لیے بعض شہروں میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی بھی عائد ہے تاہم قانون نافذ کرنے والے ادارے، خواتین اور 12 سال سے کم عمر بچے اور صحافی حضرات کو اس پابندی سے مستثنی قرار دیا گیا ہے۔ کراچی میں مرکزی مجلس نشترپارک میں صبح11بجے شروع ہوگی سکیورٹی کیلئے 6ہزار سے زائد پولیس اہلکار تعینات کئے گئے ہیں،جلوس سے پہلے بم ڈسپوزل اسکواڈسوئپنگ کرے گااورایم اے جناح روڈکوکنٹینرزلگاکربندکردیاگیا،جلوس کے راستوں پرعمارتوں پرماہرنشانہ بازتعینات کئے گئے ہیں۔سکھرمیں منڈوکھبڑسے برآمدجلوس کربلامیدان پہنچ کراختتام پذیرہوگا، پشاور میں بھی سکیورٹی کے پیش نظر موبائل فون سروس معطل کر دی گئی ،صدربازارکے داخلی اورخارجی راستے بندکر دیئے گئے، جلوس کے راستوں پرسکیورٹی کے سخت انتظامات، عزادارفوارہ چوک پرنمازظہرین اداکریں گے ،منڈی بہا ء الدین میں9اور10محرم الحرام کوڈبل سواری پرپابندی،ضلع بھرمیں ایک ہزار306مجالس اور296جلوس برآمدہوں گے،ڈی پی او کے مطابق 6جلوس حساس ترین اور32جلوس حساس قرار دیئے گئے ہیں،سکیورٹی کیلئے ایک ہزار750پولیس اہلکارتعینات کئے گئے جبکہ رینجرزکی ایک کمپنی بھی ڈیوٹی سرانجام دیگی میدان کربلا میں نواسہ رسولؐ اور ان کے ساتھیوں کی عظیم قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ملک بھر میں نویں محرم الحرام کی مناسبت سے شبیہ ،علم اور ذوالجناح کے جلوس برآمد ہوئے مجالس ہوئیں، ملک بھر میں سیکورٹی کے سخت انتظامات ، سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعے مانیٹرنگ رومز سے جلوسوں کی نگرانی کی گئی،کئی شہروں میں دوروز کیلئے ڈبل سواری پرپابندی،موبائل فون سروس معطل ۔لاہورمیں 9 محرم الحرام کا مرکزی ماتمی جلوس پانڈو اسٹریٹ اسلام پورہ اور امام بارگاہ قصر بتول شادمان سے برآمد ہوا جو روایتی راستوں سے ہوتا ہوا امام بارگاہ خیمہ سادات جین مندر پراختتام پذیرہو ا ۔ جلوس میں عزا داروں کی بڑی تعداد شرکت کی ، راستوں پرجگہ جگہ سبیلیں لگائی گئیں ،ظہرین کی نماز عالمگیر روڈ پرادا کی گئی جبکہ مغربین کی نماز پرانی انار کلی میں ادا کی گئی۔ اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ،11 ہزار سے زائد اہلکار ڈیوٹی کے فرائض انجام دیئے شرکا کی داخلی راستوں پر میٹل ڈیٹیکٹر سے چیکنگ کی گئی اورجلوس کی طرف جانے والے راستے کنٹینر، خاردار تاریں،ٹینٹ لگا کربند کردیئے گئے اس کے علاوہ کیمروں کی مدد سے ڈیجیٹل مانیٹرنگ بھی کی جاتی رہی ہے ۔کراچی میں 9محرم الحرام کا مرکزی جلوس نشترپارک سے برآمدہو گیا ،جلوس نمائش چورنگی سے ہوکرحسینان ایرانیاں کھارادر پر اختتام پذیر ہوگاجس کی سیکیورٹی کیلئے 6ہزار سے زائد پولیس اہلکار تعینات ہیں۔ پشاور میں علم اور شبہیہ ذوالجناح کا ماتمی جلوس صدر میں امام بارگاہ حسینیہ سے برآمد ہوا اور اپنے روایتی راستوں جی پی او لین اور فوارہ چوک سے ہوتا ہوا واپس امام بارگاہ حسینیہ پہنچ کر اختتام پذیر ہو ا۔ لاہور میں شبیہ ذوالجناح کا مرکزی جلوس نثار حویلی اندرون موچی گیٹ سے گزشتہ شب برآمد ہوگیا، قبل ازیں نثار حویلی میں مجلس عزا ہوئی ،قدیم مرثیہ خواں بیلہ برادر نے قدیمی مرثیہ پڑھا۔نثارحویلی سے نکلنے والا شبیہ ذوالجناح کا یہ جلوس اپنے قدیمی راستوں سے گزرتا ہوا اذان فجر کے وقت چوک نواب صاحب پہنچا۔ جہاں ماتم اور زنجیر زنی ہوئی۔ اس کے بعد یہ جلوس چوہٹہ مفتی باقر، مسجد وزیر خان، کشمیری بازار سے رنگ محل جائیگا جہاں پر نماز ظہرین ادا کی جائیگی۔ بعدازاں جلوس صرافہ بازار، گمٹی بازار، ڈبی بازار، سید مٹھااور تحصیل بازار سے امام بارگاہ مبارک بیگم، بازار حکیماں،فقیر خانہ میوزیم سے ہوتا ہوا اونچی مسجد بھاٹی گیٹ پہنچے گا جہاں سے یہ بھاٹی چوک سے لوئر مال پر کربلا گامے شاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوجائیگا جہاں شام غریباں کی مجلس برپا ہو گی۔ جلوس کے مرکزی روٹ پر سکیورٹی انتظامات کیلئے قانون نافذ کرنیوالے اداروں کیساتھ ساتھ مجلس وحدت مسلمین کے وحدت یوتھ،وحدت سکاؤٹس اور رضاکاران موجود تھے۔ دریں اثناء صبح 9بجے امام بارگاہ ایوان حیدر نیاز بیگ 10بجے رات جامع مسجد و مرکزی امام بارگاہ امامیہ کالونی ۔ 11بجے دن جامع مسجد و مرکزی امام بارگاہ امامیہ کالونی ، امام بارگاہ در پنجتن شباب چوک سمن آباد، حیدریہ مسجد شاہدرہ ٹاؤن اور صبح 9بجے امام بارگاہ کرنل فدا حسین سمیت شادمان قصربتول، اسلام پورہ پانڈو سٹریٹ، وسن پورہ، مغلپورہ، دھرمپورہ، مصری شاہ، شاہدرہ، جوہر ٹاؤن، ٹیمپل روڈ، گلاب دیوی،جعفریہ کالونی، امامیہ کالونی سمیت دیگر علاقوں سے ذوالجناح کے جلوس بھی آج برآمد ہوئے۔راستے میں جگہ جگہ دودھ، چائے، پانی، شربت کی سبیلیں لگائی گئی تھیں اسی طرح مختلف اقسام کے کھانے بھی بطور نیاز تقسیم کئے جاتے رہے۔ نواس�ۂ رسول ؐ حضرت امام حسینؓ اور ان کے جانثار ساتھیوں کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے مساجد اور مدارس میں کانفرنسیں اور قرآن خوانی کا بھی اہتمام کیاگیا ہے۔

یوم عاشور

لاہور228 راولپنڈی(کرائم رپورٹر228 مانیٹرنگ ڈیسک)لاہور میں نویں محرم کے موقع پر سکیورٹی کے انتہائی سخت اقدامات کیے گئے۔ پولیس افسران تمام دن اور رات ان جلوسوں کی سکیورٹی کے لیے موجود رہے۔ان جلوسوں کی سکیورٹی کے لیے انتہائی سخت اقدامات کیے گئے اور کسی بھی غیر متعلقہ شخص کو جلوس میں داخل نہ ہونے دیا گیا۔جلوسوں کے روٹس پر پولیس، رینجرز اور سکاوٹس کی بڑی تعداد تعینات رہی اور ان جلوسوں کی مانیٹرنگ کرتی رہی۔سی سی پی او، ڈی آئی جی آپریشنز، ایس ایس پی سکیورٹی سمیت تمام اعلیٰ قیادت ان جلوسوں کی نگرانی کرتی رہی۔دوسری طرف کابینہ کمیٹی برائے امن و امان کے ارکان نے موچی گیٹ،رنگ محل،داتا دربار اور نثار حویلی کا دورہ کرکے سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا۔ وزیر قانون رانا ثناء اللہ ، آئی جی پنجاب عارف نواز ،ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی رائے طاہر، سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر) امین وینس،ڈی سی لاہور سمیر احمد سیداور اے سی سٹی عبداللہ خرم نیازی ،ہوم سیکرٹری اعظم سلیمان، چیف ٹر یفک آ فیسر رائے اعجا ز احمد ،ایس پی سٹی محمد عا دل میمن ،ایس پی سٹی انو سٹی گیشن قر ار حسین شا ہ ،صوبائی وزیر انسداد دہشت گردی کرنل ر یٹائرڈ ایوب گادھی،منتظمین آغا شاہ حسین قزلباش سمیت دیگر افسران بھی ساتھ تھے۔ وزیرقانون رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ لاہور سمیت صوبہ بھر میں مجالس اورجلوسوں کیلئے سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔رانا ثنا اللہ نے کہاکہ وزیراعلی پنجاب شہباز شریف سکیورٹی انتظامات کو خود مانیٹر کر رہے ہیں ،انہوں نے کہاکہ جلوس کے روٹس پر موبائل سروس دس محرم الحرام کے مرکزی جلوسوں کے اختتام تک بند رہے گی۔آج بھی دسویں محرم کے موقع پر مرکزی جلوس سمیت شہر بھر میں نکلنے والے جلوسوں اور مجالس کی سکیورٹی کے لیے انتہائی سخت اقدامات کیے گئے ہیں۔ پولیس، رینجرز اور دوسرے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ہزاروں جوان ان جلوسوں کی سکیورٹی کے لیے تعینات کیے گئے ہیں اس کے علاوہ پاک فوج بھی ہائی الرٹ پر ہے جو ضرورت پڑنے پر موقع پر پہنچ جائے گی۔ ایف سی بلوچستان نے کوئٹہ میں فرقہ وارانہ کارروائی کی کوشش ناکام بنادی۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق ایف سی بلوچستان نے پشین کے علاقے طور شاہ میں کارروائی کی جہاں سے بارود سے بھری گاڑی برآمد کی گئی۔ بروقت کارروائی کے نتیجے میں کوئٹہ میں فرقہ وارانہ کارروائی کی کوشش کو ناکام بنایا گیا ہے، بارود سے بھری گاڑی محرم کے جلوس میں تخریب کاری کے لیے استعمال ہونا تھی۔ فورسز کی کارروائی میں تخریب کاری کا ماسٹر مائنڈ 2 ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیا۔ رینجرز اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اسلام آباد سمیت پنجاب کے مختلف شہروں سے 27 مشتبہ افراد کو گرفتار کرلیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق پاکستان رینجرز پنجاب اوردیگرقانون نافذ کرنے والے اداروں نے کارروائیاں کیں جس کے تحت راولپنڈی، اسلام آباد اور ملتان میں انٹیلی جنس معلومات پر آپریشنز کیے گئے۔ڈیرہ غازی خان، سیالکوٹ، لاہور، بہاولنگر، بہاولپور اور رحیم یار خان میں بھی کارروائیاں کی گئیں جب کہ ان تمام کارروائیوں اور آپریشنز میں مجموعی طور پر 27 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے جن کے قبضے سے اسلحہ بھی برآمد ہوا۔ رینجرز اور پولیس نے پنجاب کے مختلف علاقوں میں پٹرولنگ اور فلیگ مارچ کیا جب کہ حساس علاقوں کیقریب کوئیک ری ایکشن فورسز تعینات کردی گئی ہیں۔ملتان بڑی تباہی سے بچ گیا ، کالعدم تنظیم لشکر جھنگوی کے4 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا گیا ،یہ دہشت گرد نویں محرم الحرام کے جلوس کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔ محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کے ترجمان کے مطابق ملتان شہر میں دہشت گردی کا منصوبہ ناکام بناتے ہوئے 4 دہشتگردوں کو گرفتار کیا گیا ہے ۔کالعدم تنظیم لشکر جھنگوی کے دہشت گردوں کو خفیہ اطلاع پر گرفتار کیا گیا،گرفتاردہشت گردوں نے ملتان شہر میں نویں محرم کے جلوس کو نشانہ بنانا تھا۔سی ٹی ڈی کے مطابق گرفتار دہشت گردوں میں ناصر، علی، طاہر اور شفقت شامل ہیں اور ان کے قبضے سے 2 کلو بارودی مواد، ہینڈ گرینیڈز، اسلحہ اور ڈیٹونیٹر برآمد ہوئے۔ذرائع کے مطابق محرم الحرام کے جلوسوں کی حفاظت کیلئے ملتان بھر میں سرچ آپریشن جاری ہے اور اس دوران متعدد مشتبہ افراد کو بھی حراست میں لیا گیا ہے جن سے تفتیش جاری ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ محرم الحرام کے نویں اور دسویں کے جلوسوں کی سکیورٹی فول پروف بنائی جارہی ہے تاکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچا جاسکے اور اس حوالے سے حساس ادارے ، رینجرز ، پولیس اور دیگر سکیورٹی ادارے پوری جانفشانی سے سرچ آپریشن میں مصروف ہیں ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ عوام بھی امن و امان کی صورتحال برقرار رکھنے میں سکیورٹی اداروں کیساتھ مکمل تعاون کررہے لاہور اور راولپنڈی سمیت دس اضلاع کو انتہائی حساس قرار دیاگیا پشاور میں 120 ماتمی جلوس اور 300 سے زیادہ مجالس ہیں، دہشتگردی کا خطرہ موجود ہیبلوچستان میں کوئٹہ سمیت مختلف شہروں میں ماتمی جلوس نکالے جائیں گے ، شہر میں پولیس کے 6 ہزار اہلکار ڈیوٹی انجام دیں گے،ڈی آئی جی کوئٹہہیلی کاپٹرز کے ذریعے جلوسوں کی فضائی نگرانی بھی کی جائے گی، بغیر اجازت پانی اور دودھ کی سبیلیں لگانے اور نیاز تقسیم کی اجازت نہیں ہو گی پنجاب میں پولیس کے ساتھ پاک فوج، رینجرز اور ایف سی کے دستے بھی حفاظتی ڈیوٹیوں پر تعینات ہوں گے۔

یوم عاشور ۔ گرفتاریاں

مزید : کراچی صفحہ اول