”جو افسر یہ کام نہیں کرےگا ،اس کے خلاف میں قدم اٹھاﺅ ں گا“چیئرمین ضلعی ٹاسک فورس برائے انسداد مضر صحت ادویات کا اعلان

”جو افسر یہ کام نہیں کرےگا ،اس کے خلاف میں قدم اٹھاﺅ ں گا“چیئرمین ضلعی ...
”جو افسر یہ کام نہیں کرےگا ،اس کے خلاف میں قدم اٹھاﺅ ں گا“چیئرمین ضلعی ٹاسک فورس برائے انسداد مضر صحت ادویات کا اعلان

  


سیالکوٹ(مشرف زیدی سے)چیئرمین ضلعی ٹاسک فورس برائے انسداد مضر صحت ادویات طارق سبحانی نے کہا ہے کہ غیر قانونی میڈیکل پریکٹس اور جعلی ادویات کا کاروبار کرنے والے عطائی ڈاکٹرز اور نیم حکیموں کا سختی سے محاسبہ کیا جائے اوران کے خلاف سخت قانونی عمل میں لائی جائے۔

یہ ہدایات انہوں نے ضلعی ٹاسک فورس برائے انسداد مضر صحت ادویات کے اجلاس میں محکمہ صحت مقامی حکام کو جاری کیں۔ ڈپٹی کمشنر سیالکوٹ ڈاکٹر آصف طفیل، چیف ایگزیکٹو ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹیز سیالکوٹ ڈاکٹر جاوید وڑائچ، ڈی ڈی او ہیلتھ سیالکوٹ، سمبڑیال،ڈسکہ ڈاکٹر لطیف ساہی اورپسرور کے علاوہ ڈسٹرکٹ ڈرگ کنٹرولر بھی اجلاس میں شریک تھے

انہوں نے مزیدکہا کہ عوام الناس کو صحت بہترین سہولیات کی فراہمی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہاکہ عطائی ڈاکٹر انسانی جانوں سے کھیل رہے ہیں جو کسی رعایت کے مستحق نہیں۔ انہوں نے ٹاسک فورس کی میٹنگ میں شریک نہ ہونے والے افسران کی جواب طلبی کرتے ہوئے کہاکہ وہ حکومت ہدایات پر سنجیدگی سے عمل کریں اور اس سلسلہ میں غفلت یا کوتاہی نہ برتیں۔

انہوں نے محکمہ صحت کے افسران کو تلقین کی کہ مستندڈاکٹرز کا بورڈ لگا کر کام کرنے والے عطائیوں کا بھی محاسبہ کیا جائے اور متعلقہ ڈاکٹرز کو نوٹسسز جاری کئے جائیں۔

انہوں نے کہاکہ ہومیو پیتھک ڈاکٹرز کے کلینکس کا بھی معائنہ کیا جائے اور مشکوک میڈیکل پریکٹیشنرز کی اسناد کی ویریفیکیشن کروائی جائے اور ٹاسک فورس میں تمام ممبران کی شرکت کو یقینی بنایا جائے اور عدم دلچسپی کا مظاہرہ کرنے والے افسران کے اعلیٰ حکام کو ان کے خلاف کارروائی کی سفارش کی جائے گی۔

مزید : سیالکوٹ