بھارت نے چین کے خلاف بھی اپنا سب سے خطرناک ہتھیار میدان میں اُتار دیا، کیا چیز ہے کہ پہلی مرتبہ چینی حکومت کو بھی پریشان کر دیا؟ جان کر آپ کی بھی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

بھارت نے چین کے خلاف بھی اپنا سب سے خطرناک ہتھیار میدان میں اُتار دیا، کیا ...
 بھارت نے چین کے خلاف بھی اپنا سب سے خطرناک ہتھیار میدان میں اُتار دیا، کیا چیز ہے کہ پہلی مرتبہ چینی حکومت کو بھی پریشان کر دیا؟ جان کر آپ کی بھی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) فوجی اور معاشی طاقت کے اعتبار سے تو بھارت چین کے پاسنگ بھی نہیں لیکن بھارت کی ثقافتی یلغار سے پاکستان کی طرح چین کو بھی خطرہ محسوس ہونے لگا ہے اور اس خطرے میں سب سے بڑا ہاتھ بالی ووڈ کے مسٹرپرفیکٹ کی بلاک بسٹر فلم ’دنگل‘ کا ہے جس نے بھارت کے ساتھ ساتھ چین میں بھی مقبولیت کے نئے ریکارڈ قائم کر دیئے ہیں۔دنگل بھارت کی پہلی فلم ہے جو چینی باکس آفس پر مہینوں تک چھائی رہی اور چین میں صرف 2مہینوں کے اندر 19کروڑ 40لاکھ ڈالر (تقریباً20ارب روپے) کمائے۔


نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق اتنا ریکارڈ بزنس کرکے دنگل چین کی تاریخ میں سب سے زیادہ بزنس کرنے والی 20فلموں میں شامل ہو چکی ہے۔دنگل میں ایک سین ہے جس میں بھارت کا جھنڈا لہراتا ہے اور اس کے قومی ترانے کی دھن بجتی ہے۔ اس سین پر چینی فلم بینوںکو اس قدر جذباتی ہوتے دیکھا گیا کہ اکثر کی آنکھوں میں آنسو آ گئے۔ دنگل نے چین میں اس قدر ہلچل مچائی ہے کہ چینی پروڈکشن کمپنیاں جو اب تک صرف ہالی ووڈ کے ساتھ مقابلے کا تصور لیے چل رہی تھیں اب ان کی توجہ بالی ووڈ کی طرف مرکوز ہو چکی ہے اور انہوں نے نہ صرف بھارتی فلمسازوں کے ساتھ پارٹنرشپ کرنی شروع کر دی ہے اوران کی فلموں کے ڈسٹری بیوشن رائٹس خریدنے شروع کر دیئے ہیں بلکہ بھارتی ڈائریکٹرز اور سکرین رائٹرز کی خدمات بھی حاصل کرنی شروع کر دی ہیں۔


اس صورتحال نے چینی حکومت کو خاصا مضطرب کر دیا ہے۔ دونوں ملکوں میں کئی سرحدی تنازعات پراور علاقے میں اثرورسوخ کے لیے تو تناﺅ تھا ہی، اب دونوں میں ثقافتی غلبے کی جنگ بھی شروع ہو چکی ہے۔دنگل نے چینی حکام کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے کہ وہ اس میدان میں بھارت ان کے ملک پر غالب آ رہا ہے۔اس حوالے سے پیکنگ یونیورسٹی کے ساﺅتھ ایسٹ ایشیئن ریسرچ انسٹیٹیوٹ کے ڈائریکٹر جیانگ جنگ کیوئی کا کہنا تھا کہ ”سیاست، معیشت اور فوجی طاقت کے اعتبار سے چین کی ترقی بہت وسیع ہے لیکن ثقافتی محاذ پر بھارت نے چین سے کہیں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ بھارتی معیشت کا اگرچہ چینی معیشت سے موازنہ ہی ممکن نہیں لیکن بھارت اپنی ثقافت کی تشہیر کو بہت زیادہ اہمیت دیتا ہے۔“