ایمنسٹی انٹرنیشنل پربھارت میں پابندی قابل افسوس ،علی امین گنڈاپور

ایمنسٹی انٹرنیشنل پربھارت میں پابندی قابل افسوس ،علی امین گنڈاپور

  

 اسلام آباد (این این آئی) وفاقی وزیرِ امور کشمیر و گلگت  بلتستان علی امین خان گنڈاپور نے انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل پر بھارت میں پابندی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کا فاشسٹ چہرہ پوری دنیا پر بے نقاب ہو چکا ہے، انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں پر بھارت نے پہلے سے ہی مقبوضہ کشمیر میں پابندی عائد کر رکھی ہے اور اب پورے بھارت میں اس قابل مذمت پابندی سے یہ واضح ہو چکا ہے کہ بھارت میں ہندو انتہا پسندی کو ریاستی اداروں کی سرپرستی میں ہوا دی جارہی ہے جس سے خطے کی سلامتی کے لیے بڑے خطرناک نتائج برآمد ہو سکتے ہیں، انہوں نے کہا کہ بھارت میں آئے روز اقلیتوں خصوصاً مسلمانوں کو بدترین تشدد اور تعصب کا نشانہ بنایا جاتاہے، اور گذشتہ ایک سال میں ہندو انتہا پسند بھارت میں صرف گائے کے گوشت کھانے کے الزام پر مسلمانوں کو شہید کرنے اوربد ترین تشدد کا نشانہ بنانے کے درجنوں واقعات رونما ہو چکے ہیں اور بھارت کی ان کارروائیوں کو بے نقاب کر نے کی پاداش میں ایمنسٹی انٹرنیشنل جیسی انسانی حقوق کی تنظیم پر پابندی عائد کی گئی ہے، وفاقی وزیر نے کہا کہ بھارت کے ہندو انتہا پسند ایجنڈے میں بھارت کے تمام ریاستی ادارے مکمل طور پر شامل ہیں جس سے بھارت کے ان ہندوفاشسٹ خطرناک رویوں کا اندازہ لگانا مشکل نہیں ہے، انہوں نے کہا کہ دہایوں بعد بابری مسجد کو شہید کرنے والوں کو بے گناہ قرار دینے سے بھارت کی نام نہاد جمہوریت اور سیکولرزم بھی بے نقاب ہو چکی ہے۔

 امین گنڈاپور

مزید :

پشاورصفحہ آخر -