کمشنر ملتان کا اراضی ریکارڈ سنٹر کا دورہ‘ افسروں کو وارننگ 

کمشنر ملتان کا اراضی ریکارڈ سنٹر کا دورہ‘ افسروں کو وارننگ 

  

ملتان (نیوز رپورٹر) کمشنر ملتان ڈویژن جاوید اختر محمود نے شہریوں کی شکایت کے ازالے کیلئے اراضی ریکارڈ سنٹر کا اچانک دورہ کیا اور بلڈنگ کی خراب حالت پر سخت برہمی کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ افسران قبلہ درست کریں ورنہ ضلع بدر کردوں گا۔کمشنر(بقیہ نمبر50صفحہ 7پر)

 نے اراضی ریکارڈ سنٹرز کے انچارج کو وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ سرکاری عمارتوں کی حفاظت بھی ذاتی گھر کی طرح کریں۔ یہ عوام کے ٹیکس کے پیسے سے تعمیر ہوتی ہیں اور انکی حفاظت بارے انچارج جوابدہ ہے۔انہوں نے کہا کہ پانی کی نکاسی کا مناسب نظام نہ ہونا ڈینگی کی افزائش کا سبب بنتا ہے۔سرکاری افسران کو حکومتی پالیسی کو ہر صورت فالو کرنا چاہیے۔ کمشنر جاوید اختر نے اراضی ریکارڈ سنٹر میں کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد نہ ہونے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سنٹر میں رش کو کنٹرول کرنے بارے میکنزم بنایا جائے۔عمارت میں سیم کی صورتحال بارے دریافت کرنے پر سروس سنٹر انچارج کے مناسب جواب نہ ملنے پر کمشنر جاوید اختر محمود نے چھت پر جاکر پانی کی ٹینکی کو بھی چیک کیا۔انہوں نے ٹینکی لیک ہونے پر سنٹر انچارج کی سرزنش کرتے ہوئے کہا کہ سنٹر انچارج کی غفلت نے ساری عمارت خراب کر دی ہے۔ کمشنر نے ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ وقاص خاکوانی کو ڈی جی لینڈ ریکارڈ سنٹر کو سنٹروں کی حالت بارے آگاہ کرنے کیلئے مراسلہ لکھنے کی ہدایت کی۔کمشنر جاوید اختر محمود نے کہا کہ کرپشن،سرخ فیتہ کلچر کا خاتمہ حکومت کی ترجیح ہے۔تمام افسران عوامی خدمت کو اپنا شعار بنائیں۔لینڈ ریکارڈ سنٹر میں کرپشن کی شکایت پر پورا عملہ گھر بھیج دوں گا۔شہریوں کے لئے سایہ دار انتظار گاہ،واش رومز اور ٹھنڈے پانی کا انتظام یقینی بنایا جائے جبکہ خواتین کے لئے الگ انتظار گاہ، واش رومز اور کاونٹر مقرر کیا جائے۔انہوں نے شہریوں سے گفتگو کی اور مسائل بھی دریافت کئے۔

دورہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -