اہلسنت تنظیمات کی اے پی سی میں علماء کی  بھرپور شرکت‘ میلاد جلوسوں کے حوالے سے لائحہ  عمل بنانے کا فیصلہ‘ انتظامیہ کی کوتاہی برداشت  نہیں کی جائیگی‘ حامد سعید کاظمی کا خطاب

       اہلسنت تنظیمات کی اے پی سی میں علماء کی  بھرپور شرکت‘ میلاد جلوسوں کے ...

  

 ملتان (سپیشل رپورٹر)متحدہ میلاد کونسل کے زیراہتمام جلوس ہائے میلاد کے مسائل کے حوالے سے اہل سنت تنظیمات کی (بقیہ نمبر3صفحہ 6پر)

اے پی سی سے خطاب کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر مذہبی امور سید حامد سعید کاظمی نے کہا ہے کہ عشاقان رسول ماہ ربیع الاول کے پورے مہینے کو عید کی طرح مناتے ہیں،یقینا اپنے نبی کی ولادت کی خوشی منانا عید سے زیادہ مسرت کا باعث ہے،ہر گلی اورمحلے میں میلاد کے جلوس نکالے جاتے ہیں مگر سرکاری انتظامیہ میلاد کے جلوسوں کے انتطامات پر اس طرح توجہ نہیں دیتی جس طرح دیگر مذہبی جلوسوں پرتوجہ دی جاتی ہے۔ہم حکومت کو باور کرانا چاہتے ہیں کہ یہ ملک میلادیوں کی جدوجہد کے نتیجے میں قائم ہوا ہے اورمیلاد منانے والے ہی اس کی نظریاتی سرحدوں کے محافظ ہیں۔لہذا میلاد کے جلوسوں کے بہترین انتظامات ہمارا حق ہے،اس سال انتظامیہ کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ہم اپنے حق کیلئے متحد ہیں اورہر سطح پر اپنی آواز بلند کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سرکاری سطح پر میلاد منانے کے حکم کے باوجود ضلعی انتظامیہ کی عدم توجہی ایک بڑا سوالیہ نشان ہے۔جلوس ہائے میلاد کے مسائل کو حل کرنے کیلئے متحدہ میلاد کونسل کی جدوجہد قابل تحسین ہے،متحدہ میلاد کونسل منظم اندا زسے جس طرح آگے بڑھ رہی ہے اس کی مثال نہیں ملتی۔مخدوم عمران گیلانی،صاحبزادہ معصوم حامد نقشبندی اورپیر نوید فرید چشتی نے کہا کہ ایک امتی کیلئے اپنے نبی کی ولادت سے بڑھ کر کوئی اور خوشی نہیں ہوسکتی،جن لوگوں کو اللہ تعالیٰ نے اپنے حبیب کی ولادت کا جشن منانے کیلئے چنا ہے وہ خوش بخت ہیں۔جماعت اہل سنت کے صوبائی ناظم اعلیٰ علامہ فاروق خان سعیدی اورجمعیت علمائے پاکستان کے صوبائی صدر ایوب مغل نے کہا ملک کو ایک سازش کے تحت بدامنی کی جانب دھکیلا جارہا ہے مگر میلاد منانے والے اس سازش کو ناکام بنائیں گے،اس سال ماہ ربیع الاول میں نکلنے والے تمام جلوسوں کو عظمت اہل بیت و صحابہ سے منسوب کیا جائے گا۔متحدہ میلاد کونسل کے چیئرمین خواجہ پیر شفیق اللہ البدری اورمرازاارشدالقادری نے کہا کہ ہم پرامن لوگ ہیں اورپرامن جدوجہد پر یقین رکھتے ہیں،حکومت جلوسوں کے مسائل حل کرنے کیلئے فنڈز مختص کرے اوراجازت ناموں کے حصول کو آسان بنانے کیلئے ون ونڈو آپریشن شروع کیا جائے۔آل پارٹیز کانفرنس سے علامہ عثمان پسروری،محمد سلیم بلالی،راؤ عبدالقیوم شاہین،رکن الدین ندیم حامدی،راؤ عارف رضوی،مظہر جاوید سیال،سلطان محمود ملک،علامہ امیر اظہر سعیدی،شیخ صلاح الدین،حافظ ظفر قریشی اوردیگر نے بھی خطاب کیا جبکہ میجر اقبال چغتائی،علامہ سعیداختر،علامہ عبدالرشید سعیدی،مفتی شوکت فیضی،سید ناظم حسین شاہ،مفتی عامر فیاض قادری،پیر افضل فرید چشتی،پیر غلام جیلانی نقشبندی،ملک عمران یوسف،محبوب علی قادری،انجینئر فخرالاسلام بھٹہ،مولانا عمر حنیف سعیدی،قاری تنویرسعیدی،امجد بھٹہ،کامران عالم نقشبندی،سید ربنواز شاہ جمالی،قاری عبدالرؤف سعیدی،احسان بدری،عبدالحمید بدری،غلام حسین فریدی،فیاض حامدی،عبدالرزاق حامدی،دانش مرزا،مشتاق بھٹی،حافظ اورنگزیب،عرفان علی،جمشید وقاص ارائیں،ثروت علی قریشی،ودیگر نے شرکت کی۔آل پارٹیز کانفرنس کے اختتام پر اعلامیہ میلاد کے نام سے متفقہ قرارداد منظور کی گئی جس میں ضلعی انتظامیہ سے جلوس ہائے میلاد کے مسائل حل کرنے کیلئے مطالبات کئے گئے۔

خطاب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -