گیس میٹر کا کرایہ 40 روپے مقرر لیکن بجلی اور گیس کی قیمت میں کتنا اضافہ کرنے کی تیاری کر لی گئی ؟ جان کر پاکستانی سر پکڑ لیں گے 

گیس میٹر کا کرایہ 40 روپے مقرر لیکن بجلی اور گیس کی قیمت میں کتنا اضافہ کرنے کی ...
گیس میٹر کا کرایہ 40 روپے مقرر لیکن بجلی اور گیس کی قیمت میں کتنا اضافہ کرنے کی تیاری کر لی گئی ؟ جان کر پاکستانی سر پکڑ لیں گے 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی حکومت نے توانائی صارفین سے 152 ارب روپے اضافی اکھٹے کرنے کیلئے بجلی کے نرخوں میں 17 فیصد جبکہ گیس کی قیمت میں 15 فیصد اضافے کی منظوری دیدی ہے ۔

ایکسپریس ٹریبیون کی رپورٹ کے مطابق 200 یونٹ ماہانہ استعمال کرنے والے صارفین کیلئے بجلی کی قیمت میں 32 پیسے فی یونٹ اضافہ کیا جائے گا جبکہ کمرشل اور انڈسٹریل صارفین کیلئے فی یونٹ 2 روپے 63 پیسے اضافہ ہوگا جو کہ 2 فیصد اور 17.2 فیصد بنتا ہے ۔اس طرح بجلی صارفین سے 130 ارب روپے اضافی اکھٹے کیے جائیں گے ۔

دوسری جانب اسی طرح گیس کی قیمتوں میں بھی 50 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو اضافہ کرنے کی منظوری دیدی گئی ہے جس سے گھریلو صارفین اور تندور مستثنیٰ ہوں گے ، اس ضافے سے حکومت کو اضافی 22 ارب روپے حاصل ہوں گے ۔گیس اور بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کرنے کا فیصلہ کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی میں کیا گیاہے تاہم منظوری کیلئے اسے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا ۔

ای سی سی کا اجلاس مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی زیر صدارت ہوا جس دوران پاکستان سٹیل ملز ملازمین کیلئے گولڈن ہینڈ شیک اور بقایا واجبات کی ادائیگی کیلئے 31.4 ارب روپے فنڈزکی منظوری بھی دیدی گئی ہے ۔بجلی کے نرخ گزشتہ نومبر سے جون تک فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں صارفین سے وصول کیے جائیں گے۔

کمرشل گیس صارفین میں سیمنٹ اور سی این جی صارفین کیلئے 3.9 فیصد ، فرٹیلائزر فیڈ اولڈ پلانٹس کیلئے 14.8 فیصد، فرٹیلائزر فیول کیلئے 4.4 فیصد، پاور پلانٹس کیلئے 6.1 فیصد ، جنرل انڈسٹری کیلئے 4.9 فیصد اور ٹیکسٹائل سیکٹر کیلئے 6.3 فیصدقیمت میں اضافہ کیا گیاہے ۔ اس کے علاوہ گیس میٹر کا کرایہ 20 روپے سے بڑھا کر 40 روپے کر دیا گیاہے ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -بزنس -