لاک ڈاؤن کے دوران خرچہ پورا کرنے کیلئے کالج ٹیچر منشیات بیچنے لگا

لاک ڈاؤن کے دوران خرچہ پورا کرنے کیلئے کالج ٹیچر منشیات بیچنے لگا
لاک ڈاؤن کے دوران خرچہ پورا کرنے کیلئے کالج ٹیچر منشیات بیچنے لگا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) کوروناوائرس اور لاک ڈاؤن نے دنیا میں کروڑوں لوگوں سے ان کا روزگار چھین لیا مگر اس بھارتی ٹیچر نے کورونا کے سبب تنخواہ نہ ملنے پر ایسا کام شروع کر دیا کہ اپنے پیشے کا بھرم بھی نہ رکھ سکا۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ 22سالہ کرن نامی ٹیچر بھارتی ریاست تلنگانہ کے شہر سنگاریڈی کا رہائشی ہے اور آئی ٹی آئی نامی پرائیویٹ کالج میں پڑھاتا ہے۔ اسے جب لاک ڈاؤن کے دوران کئی ماہ تک تنخواہ نہ ملی تو اس نے منشیات فروخت کرنی شروع کر دیں۔

پولیس نے گزشتہ دنوں اس کے قبضے سے 127کلوگرام گانجا، ایک کار اور تین موبائل فونز برآمدکیے اور جب اس سے پوچھ گچھ کی گئی تو اس نے لاک ڈاؤن کی وجہ سے تنخواہ نہ ملنے کا جواز پیش کر دیا۔ پولیس نے ملزم کے دو دیگر ساتھیوں کو بھی گرفتار کر لیا ہے۔ ان میں 24سالہ اصغر خان اور22سالہ مہیپال شامل ہیں۔ پولیس کے مطابق یہ تینوں نوجوان پڑھے لکھے ہیں۔ اصغر اور مہیپال بھی کالج کی ڈگری رکھتے ہیں لیکن انہیں نوکری نہیں مل سکی جس کی وجہ سے وہ منشیات فروشی کی طرف راغب ہو گئے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -