امریکا نے پاکستان پر واجب الادا 132 ملین ڈالر قرض واپسی مؤخر کر دی

امریکا نے پاکستان پر واجب الادا 132 ملین ڈالر قرض واپسی مؤخر کر دی
امریکا نے پاکستان پر واجب الادا 132 ملین ڈالر قرض واپسی مؤخر کر دی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) امریکا نے پاکستان پر واجب الادا 132 ملین ڈالر (13 کروڑ 20 لاکھ ڈالرز) قرض واپسی مؤخر کردی،امریکی سفارتخانے کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ بیان کے مطابق امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم نے پاک امریکا معاہدے پر دستخط کر دیئے ہیں۔ 

نجی ٹی وی "دنیا نیوز "کے مطابق ڈونلڈ بلوم نے کہا کہ  امریکا نے پاکستان کے ذمے 13 کروڑ 20 لاکھ ڈالرز (30 ارب روپے سے زائد) قرض واپسی مؤخر کردی اور یہ معاہدہ جی 20 قرض مؤخر اقدام کے تحت کیا گیا ہے، ہماری ترجیح پاکستان میں اہم وسائل کو نئی سمت دینا ہے۔

گزشتہ روز امریکی سفارتخانے میں خطاب کرتے ہوئے امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم نے کہا تھا کہ سیلاب کے دوران امریکا، پاکستان مضبوط دوستی کی عکاسی 6 کروڑ 60 لاکھ ڈالر سے زائد کی حالیہ معاونت سے ہوتی ہے، امریکی عوام پاکستان کے ساتھ مستقل کھڑے ہیں، ہم مشکل ترین حالات میں وہ کردار ادا کر رہے ہیں جو ایک دوست کو ادا کرنا چاہئے۔

ڈونلڈ بلوم کا کہنا تھا کہ گزشتہ 75برسوں میں امریکا اور پاکستان نے باہمی احترام، مشترکہ مقاصد کی بنیاد پر تعلقات قائم کیے،کئی دہائیوں تک 32 ارب ڈالر کی امریکی اعانت نے پاکستان کے عوام کی زندگیوں پر بہتر اثرات مرتب کئے ہیں،عالمی منظرنامہ دونوں مُمالک کے دوران شراکت کی ازسر نو ترتیب کا موقع فراہم کرتا ہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -