پٹرول 7.77،ڈیزل5.94روپے فی لیٹر مہنگا،سی این جی کی قیمت میں 7.11روپے فی کلو اضافہ

پٹرول 7.77،ڈیزل5.94روپے فی لیٹر مہنگا،سی این جی کی قیمت میں 7.11روپے فی کلو اضافہ

  

اسلام آباد (این این آئی) پٹرولیم مصنوعات اور سی این جی کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کرتے ہوئے عوام پر پٹرول بم گرادیا گیا ،(آج ) یکم ستمبر سے پٹرول 7روپے 77پیسے ¾ ڈیزل 5روپے 94پیسے فی لیٹرمہنگے ہوگئے ہیں جبکہ سی این جی کی قیمت میں بھی 7روپے 11پیسے فی کلو گرام تک اضافہ کردیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق حکومت کے نئے فارمولے کے تحت آئل مارکیٹنگ کمپنیوں نے یکم ستمبر سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کااعلان کر دیا ہے آئل اینڈ گیس ریگو لیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے نئی قیمتوں کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے جس کے مطابق پٹرول 7 روپے 77پیسے فی لیٹر اضافے سے 104روپے 55پیسے فی لیٹر ہوگیا ہے اسی طرح ہائی سپیڈ ڈیزل 5روپے94 پیسے فی لیٹر اضافے کے بعد 112روپے 13پیسے ¾ مٹی کا تیل 5روپے 86پیسے اضافہ کے بعد 102روپے 21پیسے جبکہ ہائی اوکٹین 8 روپے 18 پیسے اضافہ کے بعد 134روپے 19پیسے فی لیٹر ہوگیا ہے دوسری جانب سی این جی کی قیمت میں بھی 7روپے 11پیسے فی کلو اضا فہ کر دیا گیا ہے پوٹھوہار¾ خیبر پختون خوا اوربلوچستان ریجن میں سی این جی 7روپے 11پیسے فی کلو گرام اضافے کے بعد 95روپے 72پیسے فی کلو گرام ہوگئی ہے پوٹھوہار کے سوا پنجاب اور سندھ ریجن میں سی این جی کی قیمت میں 6روپے 50پیسے کلو اضافہ کیا گیا ہے جس کے بعد نئی قیمت 87روپے 44پیسے ہوگئی ہے نجی ٹی وی کے مطابق حکومت کی جانب سے ریجن ون میں سی این جی پر 200 جبکہ پنجاب اور سندھ میں 300 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو سیس عائد کیا گیا تھا جو وصول کیا جا چکا ہے اس طرح اضافی سیس کی میعاد پوری ہونے کے باوجود یکم ستمبر سے سی این جی کی قیمت میں اضافہ غیر قانونی ہے بتایا گیا ہے کہ حکومت کے نئے فارمولے کے تحت نئی قیمتوں کاتعین آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کی طرف سے کیا گیا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -