پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ مسترد، عمران خان کا احتجاج کا اعلان ، کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا: پرویز رشید

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ مسترد، عمران خان کا احتجاج کا اعلان ، ...
پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ مسترد، عمران خان کا احتجاج کا اعلان ، کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا: پرویز رشید

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) اپوزیشن جماعتوں نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں حالیہ اضافہ مسترد کرتے ہوئے مختلف ایوانوں میں آواز اُٹھانے کاعندیہ دیا جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہاہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کو عوام دشمن قراردیتے ہوئے احتجاج کااعلان کردیا۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے پر اپنے ایک بیان میں عمران خان نے حالیہ اضافہ واپس لینے کامطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ حکومت ٹیکس کا دائرہ کار بڑھانے میں ناکام ہوگئی،ظالمانہ اقدامات کے خلاف پارلیمنٹ میں بھی احتجاج کیاجائے گا ۔ اُنہوں نے کہاکہ نرخوں میں اضافے سے عوام پر مزید بوجھ بڑھے گا، بااثر شخصیات میں سے کوئی ٹیکس ادانہیں کرتا۔عمران خان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف قومی اسمبلی کے اندر اور باہراحتجاج کرے گی۔دوسری جانب عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما سینیٹر زاہد خان نے بھی قیمتوں میں اضافے پر سخت تنقید کی۔ سینیٹر زاہد خان کا کہنا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ عوام پر ظلم ہے، اضافے کے خلاف سینیٹ میں تحریک التوا جمع کرائیں گے، انہوں نے کہا کہ حکومت چوتھی بار پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کر رہی ہے۔اُدھرایم کیو ایم کے رہنما فاروق ستار کا کہنا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی مخالفت کرتے ہیں، قیمتوں میں اضافہ عوام پر بوجھ ہے، جس کے خلاف سینیٹ اور قومی اسمبلی میں تحریک التوا جمع کرائیں گے۔جے یو آئی ف نے بھی قیمتوں میں اضافے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ تشویشناک ہے، حکومت کوقیمتوں میں کمی کیلئے اقدامات کرنے چاہیں۔اپوزیشن جامعتوں کی مخالفت پر وفاقی وزیر اطلاعات پرویز رشید کا کہنا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں عالمی منڈی کے ساتھ منسلک ہیں، عالمی منڈی میں قیمتیں بڑھنے سے اضافہ ناگزیر ہو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات پر کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا، حکومت عوام کو ریلیف دینے کیلئے کوشاں ہے۔یادرہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہر پندرہ دن بعد رودوبدل ہوتاہے اور اپوزیشن کی طرف سے بھی ایک رسمی بیان آتاہے جس کے بعد گذشتہ دور حکومت کے آخری دنوں میں قیمتوں میں اضافے واپس بھی لیے جاتے رہے ۔

مزید :

قومی -