پولیس گردی کے ذمہ داروں کیخلاف قانونی چارہ جوئی کیلئے مشاورات کر رہے ہیں ،شاہ محمود قریشی

پولیس گردی کے ذمہ داروں کیخلاف قانونی چارہ جوئی کیلئے مشاورات کر رہے ہیں ...

                                اسلام آباد(آئی این پی )پاکستان تحریک انصاف کے ڈپٹی چیئرمین شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ ایک فرد کے لئے پورے ملک کو تباہ و برباد کیا جا رہا ہے، گزشتہ روز نہتے لوگوں پر جو پولیس گردی کی گئی اس کے ذمہ داروں کے خلاف قانونی چارہ جوئی کے لئے مشاورت کر رہے ہیں ۔اتوار کو نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے ہدایت دی ہے کہ گزشتہ روز اسلام آباد میں آزادی اور انقلاب مارچ کے شرکاء پر جو پولیس گردی کی گئی اور ان پر شیلنگ کی گئی اور ربڑ کی گولیاں فائر کی گئیں ان کے ذمہ داروں کا تعین کرنے کے لئے قانونی چارہ جوئی کی جائے، ایف آئی آر درج کرانے کے لئے معلومات اکٹھی کر رہے ہیں اور اپنی قانونی ٹیم سے مشاورت کے بعد متعلقہ تھانے میں مقدمہ درج کرائیں گے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پولیس کی جانب سے خواتین اور بچوں کے ساتھ ساتھ میڈیا کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا، پولیس والوں نے تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی شفقت محمود اور عارف علوی کی گاڑیوں پر بھی حملہ کیا جب کہ میں کل سے 3 بار عمران خان کے پاس کنٹینر میں جانے کی کوشش کر چکا ہوں لیکن ہمیں پولیس کی جانب سے جانب جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔ انھوں نے کہا کہ اگر وزیراعظم نوازشریف اور وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف میری بات سن رہے ہیں تو ان سے کہتا ہوں کہ خدارا تو اس طوفان بدتمیزی کو بند کرنے کا حکم دیں اور فورا پولیس کو پیچھے ہٹنے کا حکم دیں۔تحریک انصاف کے رہنما نے کہا کہ نواز شریف کو دیکھنا چاہیئے کہ یہ مسئلہ ان کی ذات سے بڑھ چکا ہے، یہ آگ پھیل رہی ہے۔

، اس نے پورے پاکستان کو اپنی لپیٹ میں لے لینا ہے، وہ سیاسی جماعتیں جو پہلے لاتعلق تھیں اب وہ بھی اظہار ہمدردی کر رہی ہیں، آپ دیکھ رہے ہیں کہ پیپلز پارٹی کے رویے میں بھی تبدیلی آ رہی ہے، انھوں نے بھی اس سارے تشدد کی مذمت کی ہے اور امین فہیم نے بھی کہا ہے کہ نواز شریف صاحب کو ہٹ جانا چاہیئے، آج ہر طرف سے آواز آ رہی ہے کہ ایک شخص کی ذات پر پورے پاکستان کو تباہ و برباد کیا جا رہا ہے۔

مزید : علاقائی