غزہ کے مسلمانوں کی بحالی کیلئے حکومت فی الفور کر دار ادا کرے،مذہبی تنظیمیں

غزہ کے مسلمانوں کی بحالی کیلئے حکومت فی الفور کر دار ادا کرے،مذہبی تنظیمیں

  

لاہور(سٹاف رپورٹر)جمعیت اہل حدیث پاکستان اوریوتھ فورس اور قرآن و سنہ موومنٹ کے زیر اہتمام یوتھ کنونشن اور کنونشن میں منظور کی گئی قرارد ادوں مطالبہ کیا گیا کہ غزہ کے مظلوم مسلمانوں کی بحالی کے لیے حکومت فی الفور کر دار ادا کرے ۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ٹھوس کوشش کی جائے ۔ ماروائے عدالت قتل کی کاروائیوں کی روک تھا م کو یقینی بنائے جائے ۔ آئین کی اسلامی دفعات پر عمل دارمد یقینی بنایا جائے ۔ اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات پر فل الفور عمل کیا جائے ۔ سیاسی ڈیڈ لاک کو فوج کی مداخلت کے بغیر حل کیا جائے ۔ اپوزیشن کے جائز مطالبات تسلیم کیے جائیں ۔ ملک کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کے لیے تمام دینی جماعتیں متحد ہو کر اپنا کردار ادا کریں ۔ تشدد کے ذریعے کسی کے احتجاج کے حق کو روکا نہیں جا سکتا ۔کنونشن سے خطا ب کرتے ہوئے ابتسام الہٰی ظہیر نے کہا ہے کہ 14اگست 1947کو ہم نے 90سال کی غلامی کے بعد انگریزوں سے آزادی تو حاصل کرلی لیکن تہذیب ،ثقافت ،تمدن اور حلیہ میں انگریزوں ہی کے راستے پر چلتے رہے ۔انہو ں نے کہا کہ قیام پاکستان کے بعد بھی پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کے لیے قابل قدر اور قابل ذکر قربانیاں دیں گئیں جن میں سرفہرست شہدائے اسلام علامہ احسان الہٰی ظہیر ،مولانا حبیب الرحمن یزدانی اور انکے رفقاءکی قربانیاں ہیں ۔انہوں نے کہا بدقسمتی سے پاکستان تاحال ایک حقیقی اسلامی مملکت نہیں بن سکا ۔اس عظیم منزل کو پانے کے لیے ہمیں بانی پاکستان ،مصور پاکستان اور شہدائے اسلام کے مشن کو آگے بڑھانا ہو گا ۔انہوں نے کہا اگرچہ لوگ اسلامی انقلاب کے قیام کو ناممکن سمجھتے ہیں لیکن اگر ملک کے تمام دینی طبقات متحد اور منظم ہو جائیں تو پاکستان میں نفاذ اسلام کی منزل کو حاصل کرنا کچھ مشکل نہیں ۔

مذہبی تنظیمیں

مزید :

صفحہ آخر -