پارٹی میں فوج کی حمایت کا تاثر تھا،نہیں خیال عمران کے پیچھے فوج ہے: جاوید ہاشمی

پارٹی میں فوج کی حمایت کا تاثر تھا،نہیں خیال عمران کے پیچھے فوج ہے: جاوید ...
 پارٹی میں فوج کی حمایت کا تاثر تھا،نہیں خیال عمران کے پیچھے فوج ہے: جاوید ہاشمی

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کے ناراض صدر جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ عمران خان سادہ اور بھولے انسان ہیں، جتنی عزت ان کو عمران خان نے دی کبھی کسی نے نہیں دی۔پارٹی میں یہ تاثر ابھر رہا ہے کہ فوج ان کے ساتھ ہے مگر میں نہیں سمجھتا کہ فوج عمران خان کے پیچھے ہے یا ان کو سیاسی معاملات میں مدد فراہم کرتی ہے۔ تفصیلات کے مطابق جاوید ہاشمی نے نجی نیوز چینل کو انٹر ویودیتے ہوئے کہا کہ فوج کی دل سے عزت کرتا ہوں، ان کو ملک کا محافظ سمجھتا ہوںاور میرا یقین ہے کہ فوج کبھی مرضی سے اقتدار میں نہیں آئی، ان کو ہمیشہ مجبور کیا جاتا ہے۔انہوں نے کہاکہ آج تک عمران خان کو بار بار یقین دلایا جاتا ہے کہ فوجی افسران ان کے ہمراہ ہیں، اور عدالت بھی اس حکومت کو فارغ کر دے گی مگر میں ان سے کہتا ہوں کہ تھرڈ ایمپائر کبھی ان کے حق میں انگلی نہیں اٹھائے گا۔ میں نے کبھی کسی فوجی جوان یا افسر سے عمران خان کی ملاقات نہیں دیکھی ، نہ کبھی کوئی فون آیا، لیکن پارٹی میں کچھ لوگ پانچ کور کمانڈروں کی باتیں کیا کرتے تھے، پارٹی میں زیادہ تر لوگ عمران خان کے دوست نہیں ہیں۔

ایک موقع پر جب ان سے پی ٹی آئی کی اعلی قیادت کے نام لے کر پوچھا گیا کہ کیا ان میں سے کوئی فوج سے یا کسی اور طاقت سے رابطے میں تھا تو جاوید ہاشمی نے ان سب کے نام لے کر کہا کہ یہ سن بہت اچھے لوگ ہیں ان میں سے کو ئی بھی ایسا نہیں، بار بار سوال پوچھے جانے پر بھی جاوید ہاشمی نے ایسا کوئی نام نہیں لیا جو فوج سے یا آئی ایس آئی سے رابطے میں ہوتاہم ان کا کہنا تھا کہ پارٹی میں معاملات طے کرتے ہوئے محسوس ہوتا تھا کہ کوئی ان دیکھی طاقت ہم سے فیصلے کروا رہی ہے، لیکن انہوں نے اس بار بھی کسی کا نام نہیں لیا۔ جاوید ہاشمی نے کہا کہ تحریک انصاف وہ واحد پارٹی ہے جس میں ایک ایک پیسے کا حساب لیا اور دیا جاتے ہے، اور اس میں عمران خان بہت ایماندار ہیں۔ میں نے عمران خان سے کہا کہ اگلا دور ان کا ہے، مسلم لیگ ختم ہو جائے گی مگر ان کو کچھ جلدی تھی۔پارٹی میں سب نے وزیر اعظم ہاوس جانے کی مخالفت کی تھی۔ عمران خان نے ممکنہ انتخابات کے لئے امیدواروں کا سلیکشن کرنے کے لئے تین رکنی کمیٹی بھی بنائی تھی۔ شیخ رشید احمد بھی پارٹی معاملات میں مداخلت کرتے تھے مجھے اچانک محسوس ہونے لگا تھا کہ یہ سب ویسا ہی ہو رہا ہے جیسے لوگ اسکرپٹ کی باتیں کیا کرتے تھے۔

مزید : قومی /اہم خبریں