ایم کیو ایم لندن سے انضمام ناممکن

ایم کیو ایم لندن سے انضمام ناممکن
 ایم کیو ایم لندن سے انضمام ناممکن

  

لندن (این این آئی) متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ بانی ایم کیو ایم کی گذشتہ برس 22 اگست کی تقریر پاکستان اور ایم کیو ایم کے آئین کیخلاف تھی ٗ ان سے علیحدگی کا فیصلہ حتمی ہے ٗ 22اگست کے دل خراش واقعہ کے بعد جو فیصلہ کیا تھا پوری زندگی اس پر قائم رہونگا ۔ بی بی سی کو دیئے گئے انٹرویو میں فاروق ستار نے بانی ایم کیو ایم سے کسی بھی رابطے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے ایک فیصلہ کرلیا ہے کیونکہ ایک لکیر لندن سے کھینچی گئی تھی تو ایک لکیر انھوں نے بھی کھینچ لی ہے۔انھوں نے کہا کہ یہ قدرتی اور حادثاتی طور پر اور ازخود ہوا ہے اور یہی مائنس لندن کی گارنٹی ہے۔ان سے پوچھا گیا کہ ایک تاثر یہ ہے کہ ایم کیو ایم لندن اور ایم کیو ایم پاکستان ایک ہی ہیں اور صرف پاکستان میں سیاست جاری رکھنے کیلئے وہ خود کو الگ بتا رہے ہیں؟ اس کے جواب میں ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ اس طرح کی سیاست ایم کیو ایم کے متوسط طبقے کی قیادت نہیں کرتی۔انھوں نے کہا کہ پھر لندن سے جس طرح کے الزامات اور جس طرح کی مغلظات ہمارے لیے بکی کی گئی ہیں اور جس طرح کی دھمکیاں ہمیں دی گئی ہیں اور دی جارہی ہیں تو میرے خیال میں اس کے بعد بھی اگر کوئی یہ سوچتا ہے تو یہ اس کی سیاست کو سوٹ کرتا

مزید :

صفحہ اول -