سرینگر ، بھارتی فوج ’’اٹھاؤ مارو، پھینک دو‘‘ کی پالیسی پر گامزن ، 2کشمیریوں کی لاشیں برآمد

سرینگر ، بھارتی فوج ’’اٹھاؤ مارو، پھینک دو‘‘ کی پالیسی پر گامزن ، ...

  

سرینگر(اے این این ) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج ’’اٹھاؤ،مار و ،پھینک دو‘‘ کی پالیسی پر گامزن ،گم شدہ افراد کے عالمی دن پر بھی 2 لاشیں برآمد،خوف و ہراس،وادی میں قابض فورسز لوگوں کو اغواء کے بعد دوران حراست قتل کر کے لاشیں پھینکنے یا غائب کرنے میں مصروف،دو روز قبل دریائے جہلم سے نوجوان کی سرکٹی لاش ملی تھی،وادی میں ہزاروں لا پتہ نوجوانوں کے والدین بچوں کی واپشی کے منتظر،دوران حراست لاپتہ ہونے والے افراد کی تعداد 10ہزار کے قریب ہے،ورثاء سراپا احتجاج،ینگر میں متاثرین کا خاموش دھرنا، آنسوؤں اور سسکیوں کے رقعت آمیز مناظر،مزاحمتی قیادت کا لاپتہ افراد کی بازیابی کا مطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے ’’آپریشن آل آؤٹ ‘‘ کے آغاز کے بعد نوجوانوں کو سرکاری طور پر اغواء کر کے قتل کرنے اور لاشیں پھینکنے کے عمل میں تیزی دیکھی گئی ہے ۔گزشتہ روز دنیا بھر میں گم شدہ افراد کا عالمی دن منایا گیا اس روز بھی مقبوضہ کشمیر میں 3نوجوانوں کی لاشیں ملی ہیں جنھیں ممکنہ طور پر اغواء کے بعد مار کر لاشیں پھینکی گئی ہیں۔مقامی میڈیا کے مطابق جنوبی کشمیر میں 24گھنٹوں میں راجوڑی کے تین نوجوانوں کی لاشیں برآمد ہونے سے خوف و دہشت کی لہر دوڑ گئی ،شو پیاں کے پالپورہ نرواؤ علاقے میں اس وقت سنسنی پھیل گئی جب وہاں دو نوجوانوں کی لاشیں ملیں،اس دوران پولیس کو مطلع کیا گیاجس کے بعد دونوں کی لاشیں پولیس نے اپنی تحویل میں لے لی ہیں،پولیس ذرائع کے مطابق مرنے والوں کی شناخت 17سالہ عمر سہیل ولد عاصف اقبال اور 20سالہ محمد اطہر ولد عبد الرزاق ساکنان راجوڑی ہوئی ہے،پولیس نے مقدمہ درج کرکے تحقیقات شروع کر دی۔ذرائع کے مطابق ان لاشوں پر گوہ کہ تشدد کا کوئی نشان نہیں تھا تاہم لاشوں کے قریب سے سرنجیں برآمد ہوئی ہیں اور سگریٹ بھی ملے ہیں ۔اہل خانہ نے اس خدشے کا اظہار کیا ہے کہ دونوں نوجوانوں کو فورسز نے زہریلے ٹیکوں سے قتل کر کے لاشیں پھینکی ہیں،مقامی لوگوں کے مطابق یہ دونوں نوجوان بھی لاپتہ تھے ۔اس سے قبل حاجن میں دریائے جہلم سے ایک نوجوان کی سرکٹی لاش برآمد ہوئی تھی جس کی شناخت مظفر احمد پرے کے نام سے ہوئی تھی۔مظفر کے اہل خانہ کے مطابق ان کے بیٹے کو دو روز قبل اغواء کیا گیا ۔میر واعظ عمر فاروق نے کہا ہے کہ10ہزارافراد تا حال لا پتہ، کشمیر میں ہزاروں لاپتہ افراد کی بازیابی کے سلسلے میں عالمی برادری کی خاموشی افسوسناک ہے۔

مقبوضہ کشمیر

مزید :

صفحہ اول -