عراق میں داعش کا 90 فیصد مقبوضہ علاقہ واگزار، تلعفر بھی آزاد

عراق میں داعش کا 90 فیصد مقبوضہ علاقہ واگزار، تلعفر بھی آزاد

  

واشنگٹن(اظہر زمان،بیوریو چیف) عراقی سکیورٹی فورسز نے کر د جنگجوؤں کے تعاون سے ایک بڑا آپریشن کر کے شمال مغربی نینواہ صوبے کے شہر تلعفر کو آزاد کرا لیا ہے۔داعش کو شکست دینے کے لئے قائم عالمی اتحاد کے امریکی کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل ٹاؤن سینڈ نے عراقی وزیر اعظم حیدر العابدی کو اس کامیابی پر مبارک باد دی ہے اور بتایا ہے کہ اب داعش سے نوے فیصد مقبوضہ علاقہ واگزار کرالیا گیا ہے۔ موصل کے بعد اس سے مغرب میں 63 کلومیٹر پر واقع اس شہر کی آزادی بہت اہم ہے جس کے بعد ایسا پورے ملک میں صرف دس فیصد علاقہ داعش سے آزاد کرانا باقی ہے۔ پنپٹا گون کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں بتایا گیا ہے کہ شہر کو آزاد کرانے کے بعد اب دھماکہ خیز مواد اور باقی کا مائدہ چھپے ہوئے داعش کے دہشت گردوں کی تلاش کا خطرناک کام ہورہاہے۔جس میں بہت احتیاط کی ضرورت ہے تاکہ انہیں آئندہ نقصان پہنچانے سے روکا جاسکے۔ امریکی کمانڈر جنرل ٹاؤن سنیڈ نے بتایا ہے کہ تلعفر کو آزاد کرانے کے آپریشن میں اتحادی افواج براہ راست حصہ نہیں لیا۔ بلکہ عراقی افواج کو اسلحہ، تربیت اور اینٹی مینس فراہم کی تھی انہوں نے امید طاہر کی کہ عراقی افواج کی داعش کو مکمل شکست رینے کے اگلے مرحلے میں بھی اتحاد یوں کی بھرپور حمایت جاری رہے گی۔ آئندہ آپریشن غیز کے بغربی صوبے اور ہو ویہ میں کیا جائے گا۔

عراق

مزید :

صفحہ اول -