کچھی کینال منصوبے کے پہلے مرحلے کی تعمیر مکمل ہو گئی

کچھی کینال منصوبے کے پہلے مرحلے کی تعمیر مکمل ہو گئی

  

لاہور(کامرس رپورٹر)کچھی کینال منصوبے کے پہلے مرحلے کی تعمیر مکمل ہو گئی ہے۔تونسہ بیراج پر واقع پراجیکٹ کے ہیڈ ریگولیٹر سے 363کلو میٹر طویل مین کینال میں پانی بھرنے کا اہم مرحلہ شروع کر دیا گیا ہے۔مین کینال میں پانی کی بھرائی مکمل ہونے کے بعد وزیر اعظم پاکستان ستمبر کے دوسرے ہفتے میں کچھی کینال منصوبے کا باقاعدہ افتتاح کریں گے۔یہ منصوبہ بلوچستان خصوصا ڈیرہ بگٹی کے دور دراز اور پسماندہ علاقے میں آبپاش زراعت کے ذریعے لوگوں کی اقتصادی اور معاشرتی ترقی کے لئے بہت اہم ہے۔منصوبے سے ڈیرہ بگٹی میں 72ہزار ایکڑ زمین زیر کاشت آئے گی۔پراجیکٹ پر تعمیراتی کام مکمل ہونے پر چیئر مین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل مزمل حسین (ریٹائرڈ) نے مین کینال میں پانی بھرنے کے آغاز کے موقع پر تونسہ بیراج سے متصل پراجیکٹ کے ہیڈ ریگولیٹر کا دورہ کیا۔ایڈوائزر (پراجیکٹس)،جنرل منیجر (سنٹرل) واٹر اور پراجیکٹ ڈائریکٹر کچھی کینال کے علاوہ کنسلٹنٹس اور کنٹریکٹرز کے نمائندے بھی اس دوران موجود تھے ۔چیئرمین واپڈا نے ہیڈ ریگولیٹر پر نصب بٹن دبا کر مین کینال میں پانی کی بھرائی کاآغازکیا۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین واپڈا نے کہا کہ کچھی کینال منصوبہ 2002میں شروع کیا گیا تھالیکن منصوبے کی تکمیل میں تاخیر اور لاگت میں اضا فہ کی وجہ سے یہ منصوبہ تقریبا ترک کیا جا رہا تھا۔لیکن وفاقی حکومت کی بھر پور مدد اور واپڈا انجینئرز کی محنت اور شاندار کام کی بدولت اس منصوبے کو نئی زندگی ملی اور اب اسکی تعمیر مکمل کر لی گئی ہے۔انہوں نے منصوبے پر تعمیراتی کام مکمل ہونے کے حوالے سے وفاقی حکومت ،قانون نافذ کرنے والے اداروں اور پراجیکٹ انتظامیہ کو خراج تحسین پیش کیا۔

جنہوں نے شدید مشکلات اور پراجیکٹ ایریا میں امن و امان کی صورتحال کے باوجود یہ اہم کام سر انجام دیا۔

مزید :

کامرس -