این اے 13 صوابی 2 کو گیس کا منصوبہ فراڈ ہے‘ ن لیگ

این اے 13 صوابی 2 کو گیس کا منصوبہ فراڈ ہے‘ ن لیگ

  

صوابی( بیورورپورٹ )پاکستان مسلم لیگ (ن) ضلع صوابی نے جمعرات کی شام کوٹھا کے مقام پر این اے 13صوابی2کے لئے وزیر اعلی خیبر پختونخوا پرویز خٹک اور سپیکر اسد قیصر کا گیس کے منصوبے کا افتتاح جعلی اور عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق کے مترادف قرار دیتے ہوئے واضح کر دیا کہ اس حلقے کے لئے مسلم لیگ ن کے صوبائی صدر انجینئر امیر مقام نے سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف سے ایک ارب ، چالیس کروڑ آٹھ لاکھ پچاس ہزار روپے منظور کر وا کر اس کا باقاعدہ افتتاح گذشتہ جمعہ پچیس اگست کو انجینئر امیر مقام ہی نے اپنے دست مبارک سے کیا تھا۔ ان خیالات کااظہار پی ایم ایل این ضلع صوابی کے صدر افتخار احمد خان ، تحصیل صدر ملک عبدالا حد ، جنرل سیکرٹری ربنوا ز خان ، ضلع کونسل کے رکن جہانزیب خان، فضل عدنان ، ذوالفقار اور اقبال زید ہ وال نے ایک ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کیا انہوں نے سپیکر اسد قیصر کو مشورہ دیا کہ وہ وفاقی حکومت کے منصوبوں پر تختیاں لگانے کی بجائے اپنے عوام سے کئے گئے وعدے پورے کریں مسلم لیگ ن کے جلسے میں کارکنوں اور عوام نے شرکت کر کے ثابت کر دیا کہ صوابی کے عوام ن لیگ کے ساتھ ہے جب کہ وزیر اعلی کے جلسے میں سرکاری مشینری کا بے دریغ استعمال کیا گیا انہوں نے ایم این اے انجینئر عثمان ترکئی اور صوبائی سینئر وزیر برائے صحت شہرام خان ترکئی کی جانب سے این اے 12صوابی1میں گیس کی سپلائی کے لئے پشاور ہائی کورٹ میں رٹ دائر کر نے کو اپنی ناکامی چھپانے کے مترادف قرار دیتے ہوئے کہا کہ این اے 12میں گھر گھر گیس کی فراہمی کے لئے انجینئر امیر مقام نے تقریباً چھ ماہ قبل افتتاح کیا تھا جس پر یونین کونسل کرنل شیر کلے ، شیخ جانہ ، منصبدار ، چکنودہ میں عملی طور پر پائپ لائن بچھانے کا کام تیزی سے جاری ہے اسی طرح یونین کونسل شاہ منصور میں پچیس ملین روپے کی لاگت سے پائپ لائن بچھانے کا کام جاری ہے ترکئی خاندان کو آئندہ الیکشن میں اپنی شکست نظر آرہی ہے اسلئے مسلم لیگ ن کے جاری منصوبوں کو روکنے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں کیونکہ اگر ان کے حلقے میں گیس کی سپلائی بہت جلد شروع ہو گئی تو ان کی سیاست ختم ہو کر رہ جائے گی اس لئے اپنے حلقے کے عوام کے آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لئے عدالت میں رٹ دائر کیا ہے لیکن ان کے حلقے کے عوام ان کے عزائم سے اچھی طرح واقف ہے اور آئندہ الیکشن میں ان کو ناکامی کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -