امن و آشتی کے فروغ سے ہی معاشرہ ترقی کر سکتا ہے :عارف یوسف

امن و آشتی کے فروغ سے ہی معاشرہ ترقی کر سکتا ہے :عارف یوسف

  

پشاور (سٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے قانون وپارلیمانی امور اورانسانی حقوق عارف یوسف نے کہا ہے کہ کوئی بھی معاشرہ امن وآشتی کے بغیر ترقی نہیں کرسکتا اورمسلمانوں کو باہمی رنجشوں کو پس پشت ڈالتے ہوئے صلح رحمی اوراتحاد واتفاق کا مظاہرہ کرنا چاہیے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے پشاورصدر میں ایک مصالحتی جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا جوکہ دو ناراض فریقین سفیراللہ لالہ اوراحسان اللہ کے راضی نامہ کے لئے منعقد کیاگیا۔ مذکورہ دونوں فریقین کے درمیان طویل عرصہ سے عداوت چلی آرہی تھی اوراس تناظرمیں دو قیمتی جانیں بھی ضائع ہوچکی تھیں اورزخمی بھی ہوئے۔ تاہم معاون خصوصی عارف یوسف ،ملک عرفان اللہ، ڈاکٹر محمود الحسن ،ملک اشفاق اوردیگر معززین کی شب وروز محنت اور کاؤشوں سے دونوں فریقین صلح پرراضی ہوئے اور انہیں باہمی گلے ملاکر راضی نامہ کروایاگیا۔ جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی عارف یوسف نے کہا کہ اسلام ہمیں بھائی چارے ،اخوت اور بہترین اخلاق رکھنے کادرس دیتا ہے۔انہوں نے کہاکہ خاندانوں کے مابین غلط فہمیاں پیدا ہوجاتی ہیں ۔غلطیاں بھی ہوتی ہیں لیکن انسانی بھلائی اورکامیابی کے لئے بہتر ہے کہ درگزر کرنے،ایک دوسرے کی عزت واحترام کاخیال رکھنے اورحوصلہ مندی وبرداشت کاراستہ اختیار کرنے کی روش اپنانی چاہئے۔انہوں نے دونوں فریقین کے راضی نامہ پر خوشی کااظہار کیا اور امید ظاہر کی کہ ان کا یہ عمل معاشرے کے دیگر لوگوں کے لئے مثالی نمومہ ثابت ہوگااورحق تعالیٰ کے ہاں بھی قبولیت کا باعث بنے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -