پولیس مقابلوں میں 3ڈاکو مارے گئے: اسلحہ برآمد

پولیس مقابلوں میں 3ڈاکو مارے گئے: اسلحہ برآمد

  

بورے والا، جلالپور( تحصیل رپورٹر، نامہ نگار) پولیس مقابلے میں 3 خطرناک ڈاکو مارے گئے تھانہ شیخ فاضل پولیس کے ایس ایچ او (بقیہ نمبر18صفحہ12پر )

چوہدری رشید احمد جو کہ معمول کی گشت پر تھے اطلاع ملی کہ پانچ ڈاکو تھانہ غازی آباد چیچہ وطنی کے علاقہ میں ایک شخص ابو سفیان سے 125موٹر سائیکل چھین کر چک 94ای بی کی حدود میں ناکہ لگا کر کھڑے ہیں اطلاع ملتے ہی ایس ایچ او نفری کے ہمراہ پہنچے تو پتہ چلا کہ ڈاکو چک 94ای بی کے چوک میں ایک دوکان سے پٹرول ڈلوا رہے ہیں پولیس گاڑی کو دیکھتے ہی ڈاکوؤں نے سیدھی فائرنگ شروع کر دی ڈاکوؤں کی فائرنگ سے سرکاری گاڑی کی ونڈ سکرین ٹوٹ گئی اور ایک فائر کانسٹیبل ڈرائیور عبدالرزاق کے سر میں لگا اور وہ شدید مضروب ہو کر گر پڑا وائرلیس کنٹرول پر اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی بورے والا ملک طاہر مجیدایلیٹ فورس اور دیگر تھانوں کی نفری بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی تقریباً آدھ گھنٹہ فائرنگ کے تبادلہ میں دو ڈاکو مارے گئے جبکہ دیگر تاریکی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہو گئے مرنے والے ڈاکوؤں کی تلاشی سے ان کی شناخت ہو گئی ایک ڈاکو محمد اسلم ولد حبیب مسلم شیخ سکنہ 104/7-Rہڑپہ کا رہائشی ہے اور 12سنگین مقدمات میں پولیس کو مطلوب تھا اس کے قبضہ سے پسٹل 30بور 4میگزین 172گولی پسٹل اور موبائل فون برآمد ہوا جبکہ مرنے والے دوسرے ڈاکو کی شناخت غلام یسین وٹو سکنہ چک 608گ ب ستار والا تاندلیانوالہ ضلع فیصل آباد ہوئی جو کہ 9سنگین مقدمات میں ملوث تھا اس کے قبضہ سے کلاشنکوف تین میگزین 340گولی کلاشنکوف برآمد ہوئی ڈی پی او وہاڑی عمر سعید ملک ایس پی انوسٹی گیشن زبیدہ پروین اور ڈی ایس پی آرگنائزر کرائمز ٹکا سجاد محمد خان بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور پولیس مقابلہ میں حصہ لینے والے ایس ایچ او شیخ فاضل چوہدری رشید احمد اور ان کی ٹیم کیلئے 25ہزار روپے کیش کا اعلان کیا اور انہیں شاباش دی۔ دریں اثناء تھانہ سٹی کے ایس ایچ او ارشد بھٹی نے بطور مدعی موقف اختیار کیا ہے کہ وہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب پولیس نفری کے ہمراہ گشت پر تھے کہ ون فائیو کے ذریعے اطلاع ملی کہ 2 موٹر سائیکلوں پر سوار4 مشکوک افراد علی پور موڑ پر موجود ہیں اطلاع ملتے ہی علی پور موڑ پہنچے تو مشکوک افراد بمب موڑ کی طرف فرار ہو گئے بمب موڑ سے حویلی امین کی طرف جانے والے روڈ پر پولیس ان کے قریب پہنچی تو انہوں نے فائرنگ شروع کر دی۔ پولیس نے جوابی فائرنگ کی اور مزید نفری منگوا لی۔ ایس ایچ او تھانہ صدر ظہیر بابر اور ان کے ہمراہی پولیس ملزمان مدد کے لیے پہنچ گئے کچھ دیر بعد فائرنگ رُکنے پر معلوم ہوا کہ ان میں سے ایک شخص زخمی ھالت میں سڑک پر پڑا ہے اور اس کے 3 ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ہیں دریافت پر زخمی شخص نے اپنا نام رفیق عرف کلی قوم کھپرا بلوچ بتایا جس کے بعد اس کی موت واقع ہو گئی پولیس نے ملزم کے پاس موجود اسلحہ، گولیاں اور موٹر سائیکل قبضے میں لے کر اس کے مفرور ساتھیوں کے خلاف رفیق کلی کے قتل اور پولیس اہلکاروں کو مارنے کی کوشش کا الزام عائد کرتے ہوئے مقدمہ درج کر لیا ہے بتایا گیا ہے کہ رفیق کلی کھپرا بلوچ نے مشہور کھپرا گینگ کی سربراہی سنبھالنے کے بعد لعل واہ، منشی والا، چکوک اور تحصیل جلال پور میں ڈکیتی وغیرہ کی سنگین وارداتوں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا تھا اور اس کے خلاف متعدد تھانوں میں مقدمات درج ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -