عیسائی لڑکی لاہور کی اسسٹنٹ کمشنر تعینات

عیسائی لڑکی لاہور کی اسسٹنٹ کمشنر تعینات
عیسائی لڑکی لاہور کی اسسٹنٹ کمشنر تعینات

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان میں عیسائیوں کی اکثریت پنجاب میں آباد ہے جن میں سے اکثر سینٹری ورکرز کے طور پر کام کرتے ہیں لیکن ایک نوجوان لڑکی نے اپنی محنت اور لگن کے بل بوتے پر یہ ثابت کردیا کہ وسائل تھوڑے ہوں تو بھی انسان اپنے عالی حوصلے کے ساتھ بہت کچھ کرسکتا ہے۔

کرسچن اِن پاکستان ویب سائٹ کے مطابق سدرہ انور نامی مسیحی لڑکی لاہور کی اسسٹنٹ کمشنر (اے سی) تعینات ہوئی ہے ،اس سے قبل سدریٰ مسیح پاکستان آرمی میں کپتان کے عہدے پر بھی فائزر ہی ہیں۔ پاکستان میں مقیم مسیحی برادری  نے سدرہ انور کی بطور اسسٹنٹ کمشنر تعیناتی کا بھرپور خیر مقدم کیا ہے۔واضح رہے کہ کچھ سال پہلے لبھا مسیح نامی ایک سینٹری ورکربھی اپنی محنت کے بل بوتے پر سول جج بھرتی ہوا تھا ۔

مزید :

لاہور -