پنجاب کے میڈیکل اور ڈینٹل کالجوں کے انٹری ٹیسٹ 23ستمبر کو کرانے کا فیصلہ

پنجاب کے میڈیکل اور ڈینٹل کالجوں کے انٹری ٹیسٹ 23ستمبر کو کرانے کا فیصلہ

  

لاہور(کرائم رپورٹر)محرم الحرام میں پولیس اور انتظامیہ کی مصروفیت کو مدنظررکھتے ہوئے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہور کے زیر اہتمام پنجاب کے میڈیکل اور ڈینٹل کالجوں میں داخلے کیلئے انٹری ٹیسٹ 16کی بجائے 23ستمبر کو منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔فیصلہ چیف سیکرٹری پنجاب اکبر درانی کی زیر صدارت انٹری ٹیسٹ کے انعقاد کے سلسلے میں انتظامات کاجائزہ لینے کے لئے اجلاس میں کیا گیا۔ سول سیکرٹریٹ میں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف سیکرٹری نے کہا کہ محرم الحرام میں پولیس اور انتظامیہ کی مصروفیت کی وجہ سے انٹری ٹیسٹ کوری شیڈول کیا گیا ہے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ سابقہ تجربات کو مدنظر رکھتے ہوئے انٹری ٹیسٹ کیلئے بہترین انتظامات کویقینی بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ فول پروف سیکیورٹی کیساتھ ساتھ امتحانی مراکز پر پینے کاپانی، پارکنگ، والدین کے لئے سایہ دار انتظار گاہ سمیت دیگر ضروری انتظامات کو قبل از وقت مکمل کر لیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ انٹری ٹیسٹ کا شفاف انعقاد میرٹ کو یقینی بنانے کیلئے بہت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیکل ایسا شعبہ ہے جس میں صرف بہترین طلبہ کو داخلہ ملتا ہے، اس کے معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا۔ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر جاوید اکرم نے اجلاس کو بتایا کہ انٹری ٹیسٹ بیک وقت 13شہروں میں ہوگا۔ان شہروں میں لاہور، فیصل آباد، ملتان، راولپنڈی، گجرات، گوجرانوالہ، سیالکوٹ، ساہیوال، سرگودھا، بہاولپور، حسن ابدال، ڈی جی خان اور رحیم یار خان شامل ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ انٹری ٹیسٹ صبح10بجے شروع ہوگا اور ساڑھے 12بجے اختتام پز یر ہوگا۔انٹری ٹیسٹ کے پرچے کی تیاری سے لیکر اس کی ترسیل تک جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جارہا ہے تاکہ پرچہ کی سکیورٹی کو یقینی بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ اس سال انٹری ٹیسٹ میں ستر ہزار سے زائد امیدواروں کی شرکت متوقع ہے۔ اجلاس میں محکمہ داخلہ، سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر، اطلاعات کے ایڈمنسٹریٹو سیکرٹریز،کمشنرلاہور ڈویڑن، ڈپٹی کمشنر لاہور، ڈی آئی جی آپریشنز لاہوراور متعلقہ افسران نے شرکت کی جبکہ ڈویڑنل کمشنرز ، آرپی اوز اور متعلقہ اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔

مزید :

علاقائی -