گستاخانہ خاکوں کا سلسلہ ہمیشہ ہمیشہ کیلئے روکنا ہو گا : سراج الحق

گستاخانہ خاکوں کا سلسلہ ہمیشہ ہمیشہ کیلئے روکنا ہو گا : سراج الحق

  

لاہور(آئی این پی ) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے ہالینڈ میں منعقد ہونیوالے توہین آمیر خاکوں کے مقابلے کی منسوخی کے اعلان پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے یہ سلسلہ کافی عرصے سے جاری ہے ، اسے مستقل طور پر روکنے کیلئے امت مسلمہ کے حکمران اور او آئی سی کو متفقہ لائحہ عمل بناناچاہیے ۔ جامع مسجد منصورہ میں اجتماع نماز جمعہ سے خطاب میں انکامزید کہنا تھا وزیراعظم عمران خان ستمبر میں اقوام متحدہ میں ہونیوالے اپنے ممکنہ خطاب میں اس مطالبے کو بھی شامل کریں کہ پیغمبر اسلام ؐ اور دیگر انبیائے کرام ؑ کی ناموس کے تحفظ ا و ر قرآن کریم و آسمانی کتب کی توہین روکنے کیلئے ایک قانون بنایا جائے او راس کی خلاف ورزی کو ناقابل معافی جرم قرار دیا جائے ۔ توہین آ میز خاکوں کے ذریعے ڈیڑھ ارب مسلمانوں کی دل آزاری کی جاتی ہے ، کوئی مسلمان اس کو برداشت نہیں کرسکتا یہ اس کے ایمان کا مسئلہ ہے، ان مقابلوں کے اعلان کے بعد پوری دنیا کے مسلمان اس پر شدید ردعمل، احتجاج اور مظاہرے کر رہے ہیں ، مغرب اور امریکہ ہوش کے ناخن لیں ، دنیا کے امن کو خطرے میں نہ ڈالیں اورایسے شیطانی کام کرنیوالوں کو روکیں ورنہ یہ کسی بڑی جنگ کا پیش خیمہ بن سکتے ہیں ۔ مغرب اور خصوصاً امریکہ ایسے شر انگیز افراد کی پشتیبانی کر رہاہے جو توہین رسالت کے مرتکب ہوتے ہیں ۔ بنگلہ دیش کی تسلیمہ نسرین اور سلما ن رشدی امریکی حمایت کی وجہ سے دنیا کی شاندار زندگی گزار رہے ہیں ۔ کمزور سے کمزور مسلمان بھی حضور پاک ؐ کی ناموس پر کٹ مرنے کیلئے تیار ہے، او آئی سی کا فوری طور پر اجلاس بلانے کا حکومت مطالبہ کرے اور اس اجلاس میں حضور اکرمؐ کی ناموس کے تحفظ کیلئے ٹھوس لائحہ عمل بنایا جائے اور اس پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے ۔

مزید :

صفحہ آخر -