فیصل آباد ، سرکاری افسر نے اوورسیز پاکستانی خاتون کے 95لاکھ روپے ہڑپ کر لئے

فیصل آباد ، سرکاری افسر نے اوورسیز پاکستانی خاتون کے 95لاکھ روپے ہڑپ کر لئے

  

فیصل آباد(نامہ نگار خصوصی)فیصل آباد نعمت کالونی میں رہائش پذیر سرکاری انشورنس کارپوریشن کے افسر مقبول نے اوورسیز پاکستانی خاتون کے 95لاکھ روپے ہڑپ کر کے متاثرہ خاتون کے خاوند اسد اللہ کے خلاف 2مقدمات درج کروا دئیے جو پولیس نے تفتیش کے بعد خارج کر دئیے مگرمتاثرہ خاتون کو 95لاکھ روپے دلوانے سے انکار کر دیا ۔متاثرہ خاتون مقبول بی بی نے برطانیہ سے ای میل کے ذریعے وزیر اعظم عمرا ن خان،چیف جسٹس پاکستان اور آئی جی پنجاب سے قانونی امداد کی اپیل کردی۔ متاثرہ خاتون نے اپنی درخواست میں کہا ہے کہ برطانیہ کے شہر مانچسٹر میں میرا اپنا ایک مکان ہے جو میں نے 2014ء میں برطانیہ میں ہی مقیم پاکستانی طارق عزیز کے ہاتھ ایک کروڑ 7لاکھ روپے میں فروخت کر دیا اس سودے کی ایک اہم شرط یہ تھی کہ طارق عزیز خرید کنندہ کا بھانجا محمود الحسن ایک کروڑ روپے سات لاکھ کی رقم پاکستان میں مقیم میرے خاوند اسد اللہ کو ادا کرے گا مگر طارق عزیز نے مبینہ طور پر 95لاکھ روپے پہلی ادائیگی کے ضمن میں اپنی سہولت کیلئے اپنے بھانجے محمود الحسن کے ذریعے اپنے دوست اور پڑوسی مقبول احمد پر اعتبار کرتے ہوئے اسے دے دیئے جس کے بعد مقبول احمد کی نیت خراب ہو گئی اور اس نے یہ رقم خوردبرد کرنے کیلئے میرے خاوند اسد اللہ خان کیخلاف پہلی ایف آئی آر نمبر14/1046بجرم 406ت پ تھانہ پیپلزکالونی جبکہ دوسری ایف آئی آر 18/450بجرم 406 تھانہ بٹالہ کالونی میں درج کرا دی جو بوگس ہونے کی وجہ سے خارج ہو گئیں اور جب ہم نے طارق عزیز کے بھانجے محمود الحسن سے اپنی رقم مانگی تو اس نے95لاکھ روپے کی مقبول احمد کو ادائیگی کا ذکر کر کے اس سے وصول کروانے کا وعدہ کیا اورجب مقبول احمد رقم وصولی سے مکرگیا تومحمودالحسن نے دو مقدمات 16/355زیر دفعہ 406تھانہ صدر پاکپتن اور 18/193بجرم 406تھانہ مدینہ ٹاؤن فیصل آباد درج کروائے مگر ہماری رقم نہیں ملی جبکہ مقبول احمد اب میرے خاوند پر مزید مقدمات درج کرانے اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں جس کا اصل مقصد ہماری رقم خوردبرد کرنا ہے۔

رقم خورد برد

مزید :

صفحہ آخر -