فنانشل ایکشن ٹاسک فورس سے گھبرانے کی ضرورت نہیں ، گرے لسٹ سے نکل جائینگے : وزیر خزانہ

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس سے گھبرانے کی ضرورت نہیں ، گرے لسٹ سے نکل جائینگے : ...

  

اسلام آباد( سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ پاکستان کوفنانشل ایکشن ٹاسک فورس سے گھبرانے کی ضرورت نہیں،ہم گرے لسٹ سے نکل جائیں گے،ہمارے پاس ان کے تحفظات کو دور کرنے کیلئے 15مہینے ہیں ،فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے تحفظات کے حوالے سے نیشنل ایگزیکٹیو کمیٹی بنادی گئی۔ ان خیالات کو اظہار انہوں نے سینیٹ میں توجہ دلاؤ نوٹس کا جواب دیتے ہوئے کیا ۔ پیپلزپارٹی کی سینیٹر شیری رحمان نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے وفد کی جانب سے ان کے حالیہ دورے کے دوران اٹھائے گئے مطالبات کے حوالے سے توجہ دلاؤ نوٹس پیش کیا تھا ۔شیری رحمان نے کہا کہ یہ مسئلہ پاکستان کیلئے تشویش کا باعث ہے ،۔انہوں نے کہا کہ کیا پاکستان گرے لسٹ سے اترے گا اگر نہیں تو اس کی وجوہات کیا ہیں اور نیشنل ایکشن پلان کا کیا کردار ہے ، توجہ دلاؤ نوٹس پر جواب دیتے ہوئے وفاقی وزیری خزانہ اسد عمر نے کہا کہ ایف اے ٹی ا یف کا حالیہ دور ایک الگ مشق ہے ، اگر پاکستان گرے لسٹ میں نہ ہوتا تو تب بھی انہوں نے آنا تھا کیونکہ ایف اے ٹی ایف کے وفد کا دورہ ایک روٹین کی کارکردگی جانچنے کا دورہ تھا۔انہوں نے کہا کہ ہمیں گرے لسٹ میں ڈال کرہمارے ساتھ امتیازی سلوک کیا گیا ، دوست ممالک نے بھی ہمیں اس معاملے پر کمیشن میں سپورٹ نہیں کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل پاکستان2مرتبہ بلیک لسٹ میں جا چکاہے۔دریں اثناء وقفہ سوالات کے دوران وفاقی وزرائاسد عمر،مخدوم خسروبختیار اورعبدالرزاق داؤد نے سوالات کے جوابات دیتے ہوئے کہا کہ لیگی دورحکومت میں پانچ برسوں کے دوران حکومت نے 42.1ارب ڈالر کا بیرونی قرضہ لیا اوراس عرصے کے دوران 70ارب ڈالر کے قریب رقم واپس کی گئی،آئی ایم ایف کے پاس جانے یا نہ جانے کا فیصلہ پارلیمنٹ کے ذریعے کریں گے، پانچ برسوں کے دوران یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن کے ذریعے حکومت نے 23.279بلین روپے کی سبسڈی مہیا کی ،یوٹیلیٹی سٹورز کو بند نہیں کریں گے مگراس کی 1400 فضول برانچیں بند کریں گے، 2400ارب کا قرضہ سٹیٹ بینک سے لیا گیا ہے جبکہ صرف 1200 ارب کا قرضہ گزشتہ سال لیا ہے،ایک سال کے دوران 1200ارب کے نوٹ چھاپے گئے ، پانچ برسوں میں زرعی ترقیاتی بینک کو کوئی مالی خسارہ نہیں ہوا۔حوالہ اور ہنڈی کے حوالے سے ایک اجلاس جلد وزیراعظم کی زیر صدارت ہو گا،حکومت قرضے لینے کی وجوہات کو کم کرے گی،اس حوالے سے ہم اپنا پلان پارلیمینٹ میں لائیں گے اور مشورہ بھی لیں گے کیونکہ حکومت اکیلے فیصلے نہیں کرے گی۔

وزیر خزانہ

اسلام آبا د( سٹاف رپورٹر ) سینیٹ کے ڈپٹی چیئرمین نے اپوزیشن کی درخواست پر عام انتخابات میں ہونے والی مبینہ دھاندلی سے متعلق تحریک التوا پر بحث پیر تک ملتوی کر دی ۔تفصیلا ت کے مطابق گزشتہ روزسینیٹ اجلاس میں عام انتخابات میں ہونے والی مبینہ دھاندلی سے متعلق تحریک التوا پر بحث کی جانی تھی تاہم سینیٹر میر حاصل خان بزنجو نے کہا کہ تحریک التواپر بحث پیر تک ملتوی کی جائے ، جس پر قائد حزب اختلا ف راجہ ظفرالحق نے بھی تحریک التو ا پیر تک ملتوی کر نے کی حمایت کی ، ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے قائد ایوان شبلی فراز سے پوچھنے کے بعد تحریک التوا پیر تک کیلئے ملتوی کر دی ۔ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے انسانی حقوق کی پامالی ، خواتین اور بچوں کے ساتھ ہونے والے واقعات سے متعلق تحریک التوا انسانی حقوق کمیٹی کو بھجوا دی ۔سینیٹر میاں عتیق شیخ نے انسانی حقوق کی پامالی اور خواتین اور بچوں کیساتھ ہونے والے واقعات سے متعلق تحریک التوا منظوری کیلئے پیش کی ، میاں عتیق شیخ نے کہا کہ عورتوں اور بچوں پر تشدد کیا جا رہا ہے ، قوانین موجود ہیں لیکن ان پر عملدر آمد کیوں نہیں ہوتا ،اگر کوئی سقم ہے تو وہ دور کیا جا ئے ، یہ ہمارا قومی مسئلہ ہے اس سے پوری دنیا میں بدنامی ہو رہی ہے ، ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے معاملہ انسانی حقوق کی کمیٹی کو بھجوادیا ۔

بحث ملتوی

مزید :

صفحہ اول -