بیٹا دل کا مریض ‘ علاج کیلئے رقم نہیں ‘ کہاں جائیں ‘ کس سے فریاد کریں ‘ والدین روپڑے

بیٹا دل کا مریض ‘ علاج کیلئے رقم نہیں ‘ کہاں جائیں ‘ کس سے فریاد کریں ‘ ...

  

جام پور (نمائندہ خصوصی) کھوسہ کالونی کے رہائشی غریب محنت کش مرید حسین ولد اللہ ڈیوایا کھوسہ نے بیوی کے ہمراہ پریس کانفرنس میں بتایا کہ اس کے 12سالہ بیٹے محمد وقاص کے دل کے پیدائشی دو وال لیک ہیں جبکہ دل میں سوراخ بھی تھا ٗ 4سال قبل اس وقت کے ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی خان گورچانی نے پنجاب حکومت کے تعاون سے آپریشن کرکے دل کے سوراخ کاکامیاب علاج کرادیا (بقیہ 43نمبرصفحہ7پر )

تھا تاہم دل کے دولیک والوں کا علاج صرف انڈیا میں ہونا ہے جس پر کم و بیش 20لاکھ روپے کے اخراجات ہونے ہیں جن کا بندوبست میرے لئے انتہائی ناممکن ہے ۔ مرید حسین نے بتایا کہ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ 12سال کی عمر تک پہنچنے کے بعد دل کے لیک وال کا علاج ہوگا ۔ اس دوران میں اپنی عمر بھر کی جمع پونجی جن میں میری بیوی کے جہیز کے زیورات اور 5مرلے کا پلاٹ بھی شامل ہے علاج پر خرچ کر چکے ہیں اب میرے پاس پھوٹی کوڑی بھی نہیں بچی کہ جس سے میں بیٹے کے علاج کے لئے 100/50روپے کی سیرپ ہی لے سکوں ۔ انہوں نے بتایا کہ قبل ازیں میری ایک بیٹی کے بھی پیدائشی طورپر دل کو دو وال لیک تھے جن کا میں علاج نہ کراسکا اور میری بیٹی میری آنکھوں کے سامنے تڑپ تڑپ کر موت کی اندھی وادی میں اتر گئی اور اب میں اپنے بیٹے کو بے بسی کے ساتھ دیکھ رہاہوں ۔مرید حسین نے ں وزیر اعظم پاکستان ٗ پنجاب حکومت ٗ بحریہ ٹاؤن کے ملک ریاض سمیت مخیر حضرات سے مالی امداد کی اپیل کی ہے تاکہ وہ انڈیا جاکر اپنے بیٹے کا علاج کراسکے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -