کاوش عمر اور ڈاکٹراکرام شوق کی یاد میں تعزیتی ریفرنس کا انعقاد

کاوش عمر اور ڈاکٹراکرام شوق کی یاد میں تعزیتی ریفرنس کا انعقاد

  

کراچی( اسٹاف رپورٹر) اکادمی ادبیا ت پاکستان کراچی کے زیراہتمام دو معروف شعراء کاوش عمر ڈاکٹر اکرام الحق شوق کے لیئے اکادمی ادبیات کے آفس میں تعزیتی ریفرنس کا انعقاد کیا گیا اس موقع پر ملک کے نامور ادیب شاعر پروفیسر سحر انصاری نے کہا کہ دونوں شعراء ادب براء زندگی کے قائل تھے او رمعاشرے کی تعمیر عدل و مساوات کے اصول پر کرنا چاہتے تھے معروف دانشور راحت سعید نے کہا کے آپ دونوں فکر کو بیدار کرنے والے شاعر تھے دونون شعراء نے اردو شاعری کو نئے احساسات متنوع تجربات اور نئی حسیات سے مالا مال کرنے میں کوئی کثر نہ چھوڑی معروف شاعر سلطان مسعود نے کہا کہ دونوں شعراء اپنی تحریروں میں اپنی محبتوں ہمارے درمیاں موجود ہیں اور رہیں گے ۔ عرفان عابدی نے کہا کہ آپ دونوں اپنی عمر کے دورانئے میں چراغ کی روشنی رہے اور جب یہ چراخ بجھا تو مشعل بن گئے۔ قادربخش سومرو ریزیڈنٹ ڈائریکٹر نے کہا کہ آپ دونوں اصول پرست اور خوددار انسان تھے آپ دونوں کی تخلیقی قوت فکری مطالعہ اپنی معاصر احباب میں منفرد ہیں جب کہ اس موقع پر کئی ادباء و شعراٗ نے دونوں شعراء کو خراج تحسین پیش کیا۔قادربخش سومرو ریزیڈنٹ ڈائریکٹر نے آخر میں اکادمی ادبیا ت پاکستان کے جانب سے شکریہ ادا کیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -