مجلس علماء پاکستان کے زیر اہتمام بادشاہی مسجد کے باہر احتجاجی مظاہرہ

مجلس علماء پاکستان کے زیر اہتمام بادشاہی مسجد کے باہر احتجاجی مظاہرہ

  

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر) تاریخی عالمگیری باد شاہی مسجد لاہور میں نماز جمعہ کے بعد بادشاہی مسجد کے مرکزی گیٹ پر مجلس علماء پاکستان کے زیر اہتمام سینکڑوں مظاہرین نے خطیب و امام وچیئر مین مجلس علماء پاکستان مولانا سید عبد الخبیر آزاد کی زیر قیادت ایک زبردست مظاہرہ کیا مظاہرین سے مولانا سید عبد الخبیر آزاد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حرمت انبیاء و ناموس رسالت پر عالمی سطح پر قانون بنایا جائے،او آئی سی امت مسلمہ کا مقدمہ لڑنے کیلئے فعال کردار ادا کرے ،حکومت پاکستان نے جس طرح کا موقف اپنایا ہے اس طرح سے دیگر اسلامی ممالک بھی ہمت کریں اور او آئی سی کا اجلاس طلب کر کے اس معاملے پر اپنی آواز بلند کریں ، آج ہالینڈ نے اپنے گستاخانہ خاکوں کے مقابلہ کا اعلان واپس لیکر اپنے آپ کو ایک بہت بڑے بحران سے بچا لیا ہے ،یقیناًیہ دنیا بھر میں جاری مسلم امہ کی طرف سے شدید مذمت اور مظاہرے واحتجاج کا رد عمل ہے جس پرآخر کار ہالینڈ کو اپنے گھٹنے ٹیکنے پڑے ،اس طرح کے خاکوں کے مقابلہ یہ لادین قوتوں کی طرف سے وہ اسلام دشمنی ہے جو وہ وقتا، فوقتا اس طرح کے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کرتے رہتے ہیں ،ہالینڈ کے جاری کردہ خاکوں کی پر زور مذمت اورتحفظ ناموس رسالت پر حکومت پاکستان کا وا ضح اور دو ٹوک مؤقف 22کروڑ عوام کی آواز ہے ،ہالینڈ نے اپنے اعلان کو واپس لیکراپنے آپ کو ایک بہت بڑے بحران اور اپنے خلاف پھیلتی ہوئی آگ سے بچا لیا ہے ،وزیر اعظم عمران خان اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اس موقع پر جو موقف اپنایا ہے یہ پاکستانی عوام اور امت مسلمہ کی کی مضبوط آواز تھیاور دو ٹوک موقف تھاجس پر ہالینڈ کو گھٹنے ٹیکنے پڑے ،آج باد شاہی مسجد لاہور میں فرزندان اسلام کا یہ مظاہرہ اس بات کی غمازی کر رہا ہے کہ آئندہ اس قسم کے ہتھکنڈوں سے باز آیا جائے اور مسلمانوں کے جذبات سے نہ کھیلا جائے

عبدالخبیر آزاد

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -