سرکاری سکولوں میں40ہزار اساتذہ کی کمی ، فیل ہونے والے طلبہ کی تعداد میں اضافہ

سرکاری سکولوں میں40ہزار اساتذہ کی کمی ، فیل ہونے والے طلبہ کی تعداد میں اضافہ

  

لاہور(حافظ عمران انور)پنجاب بھر کے سرکاری سکولوں میں 40ہزار اساتذہ کی کمی، اساتذہ کی کمی کی وجہ سے بڑی تعداد میں طلبہ امتحانات میں فیل ہونے لگے۔ تعلیمی معیار زوال پزیر ہونے لگا ۔نئی حکومت بننے کے بعد محکمہ تعلیم نے اساتذہ کی کمی کو پورا کرنے کے لئے تمام سی ای اوز سے اساتذہ کی فہرستیں طلب کر لیں ۔ اساتذہ کی موجودہ تعداد کو جاننے کے لئے پنجاب کے تمام سی ای اوز کو مراسلہ جاری کر دیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق پنجاب بھر کے سکولوں میں اساتذہ کی کمی کا نوٹس لیتے ہوئے محکمہ تعلیم سکول ایجوکیشن نے اساتذہ کی کمی کو پورا کرنے اور بچوں کو معیاری تعلیم کی فراہمی کے لئے اساتذہ کی بھرتی کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کے مطابق پنجاب بھر کے 47ہزار سرکاری سکولوں میں 40ہزار سے زائد اساتذہ کی کمی ہے جس کی وجہ سے بڑی تعداد میں طلبہ فیل ہو رہے ہیں ۔یہ وجہ ہے کہ گزشتہ نویں جماعت کے سالانہ امتحانات میں اساتذہ کی کمی کی وجہ سے 50فیصد بچے فیل ہو گئے تھے ۔اس حوالے سے محکمہ تعلیم سکول ایجوکیشن نے اساتذہ کی کمی کا ناٹس لیتے ہوئے پنجاب کے تمام سی ای اوز ایجوکیشن کو سکولوں میں تعینات تمام کیٹیگریز کے اساتذہ کی معلومات فراہم کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں اور کہا گیا ہے کہ پنجاب کے تمام سکولوں میں اساتذہ کی خالی پوسٹوں کی مکمل معلومات محکمے کو ارسال کی جائیں ۔مراسلے میں یہ ہدایات بھی جاری کی گئی ہیں کہ تمام ریکارڈ سکول انفارمیشن سسٹم میں بھی اپ ڈیٹ کیا جائے اور سکولوں میں ٹیچنگ سٹاف کی تمام معلومات اگلے 2 روز تک ارسال کی جائیں اور تمام معلومات ایکسل فارمیٹ میں بھیجی جائے۔ اس حوالے سے پنجاب ٹیچرز یونین کے سیکرٹری جنرل رانا لیاقت نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اساتذہ کی اتنی بڑی تعداد میں کمی کی وجہ سے طلبہ کی تعلیم متاثر ہو رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ پہلے ہی اساتذہ کی تعداد انتہائی کم ہے لیکن دوسری طرف اساتذہ کو الیکشن ڈیوٹیوں،امتحانی ڈیوٹیوں اور دیگر ذمہ داریوں پر لگادیا جاتا ہے جس کی وجہ سے بچوں کا شدید تعلیمی حرج ہوتا ہے

فیل

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -