مردان ،ضمنی انتخاب حلقہ پی کے 53 کیلئے 27 امیدوار میدان میں

مردان ،ضمنی انتخاب حلقہ پی کے 53 کیلئے 27 امیدوار میدان میں

  

مردان ( بیورورپورٹ) مردان کے واحد صوبائی حلقے پی کے 53 میں ضمنی انتخابات میں حصہ لینے کے لئے27 امیدوار وں نے کاغذات نامزد گی جمع کردایئے اے این پی کی طرف سے احمد خان بہادر نے کاغذات جمع کرادیئے تحریک انصاف کے سابق ضلعی جنرل سیکرٹری عبدالسلام آفریدی سمیت ایک درجن سے زائد امیدواروں نے کاغذات جمع کردایئے صوبائی اسمبلی کی الیکشن لڑنے کی خواہش میں 2ڈسٹرکٹ ممبران مستعفی بھی ہوگئے ٹکٹ کس کو ملے گا اس کا فیصلہ ابھی باقی ہے عوامی نیشنل پارٹی نے سابق رکن صوبائی اسمبلی احمد بہادرخان کوٹکٹ جاری کیا ہے جبکہ تحریک انصاف نے ابھی اپنے امیدوار کا فیصلہ نہیں کیا تاہم یونین کونسل منگا سے تعلق رکھنے والے تحریک انصاف کے ڈسٹرکٹ ممبر طاہر خان نے اپنی نشست چھوڑ کر استعفیٰ کونسل کے کنوینئیر کے حوالہ کردیا جبکہ پی ٹی آئی ہی کے مردان خاص سے تعلق رکھنے والے ممبرعلی گوہر لالابھی مستعفی ہوگئے ہیں اورکاغذات جمع کردایئے اس طرح پی ٹی آئی کے سابق ضلعی جنرل سیکرٹری عبدالسلام آفریدی ،عمرفاروق کاکاخیل ،اورنگ زیب ،ہمایون خان خلجی ،بختیارخان،حضرت حبیب ،شاہد انور آفریدی ،جاوید حسین ،دوست محمد مہمند،ہاشم خان دیگان خیل ،شاہ زیب خان کے علاوہ، قومی وطن پارٹی کے ولایت خان، مرتضیٰ باچہ(آزاد امیدوار) اور سینیٹر خان زادہ خان کے بیٹے ذیشان خان زادہ نے بھی کاغذات جمع کردایئے محمد جاوید آفریدی ،نیازعلی ،زرغون شاہ ،انورخان ،اکبر شاہ مہمند، مصورخان،شاہ سید آفریدی،محمد اسماعیل،یوسف شاہ ،عمر مسعود الرحمان بھی اس حلقے کے لئے کاغذات جمع کرانے میں شامل ہیں یاد رہے کہ اس حلقے سے عام انتخابات میں سابق وزیراعلیٰ امیرحیدرخان ہوتی نے تحریک انصاف کے امیدوار عمرفاروق کاکاخیل کو شکست دے کر کامیابی حاصل کی تھی تاہم بعدازاں امیرحیدرخان ہوتی نے قومی اسمبلی کی نشست اپنے پاس رکھ کر یہ صوبائی سیٹ خالی کردی تھی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -