نوابشاہ میں حفاظتی ٹیکوں سے بچوں کی ہلاکتوں سے متعلق کیس،چیف جسٹس کا محکمہ صحت اور ایڈووکیٹ جنرل کو معاملہ حل کرنے کی ہدایت

نوابشاہ میں حفاظتی ٹیکوں سے بچوں کی ہلاکتوں سے متعلق کیس،چیف جسٹس کا محکمہ ...
نوابشاہ میں حفاظتی ٹیکوں سے بچوں کی ہلاکتوں سے متعلق کیس،چیف جسٹس کا محکمہ صحت اور ایڈووکیٹ جنرل کو معاملہ حل کرنے کی ہدایت

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)نوابشاہ میں حفاظتی ٹیکوں سے 4بچوں کی ہلاکت سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹرزکی غفلت ثابت ہوچکی ہے اب کیاطریقہ کارہے؟۔

چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ دہشتگردی میں مارے جانے والوں کیلئے کتنا معاوضہ ہے؟چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ان لوگوں کوکیا 25،25 لاکھ روپے اداکرنے کاآردڑکردوں؟۔

محکمہ صحت حکام نے کہا کہ دہشتگردی میں جاں بحق افراد کے لواحقین کو5لاکھ روپے دیے جاتے ہیں،ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے کہا کہ اس حوالے سے لائحہ عمل کیلئے مہلت دی جائے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ وزیر صحت اور سیکرٹری صحت متاثرہ بچوں کے والدین سے ملاقات کریں،کیا ان کو یہاں سے مایوس بھیج دوں جودورسے آئے ہوئے ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ دونوں افسران فوری اس مسئلے کاحل نکالیں،اس حوالے سے میٹنگ کرکے ایک ہفتے میں رپورٹ پیش کی جائے۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -